کھیل میں اب بیٹسمین کو بیٹسمین نہیں کہا جائے گا، آئی سی سی

بیٹسمین کی جگہ صنفی جانبداری سے پاک لفظ ’بیٹر‘ استعمال کیا جائے گا جو خواتین اور مرد دونوں کیلئے استعمال ہوسکے گا، اعلامیہ

جمعرات 7 اکتوبر 2021 21:40

کھیل میں اب بیٹسمین کو بیٹسمین نہیں کہا جائے گا، آئی سی سی
دبئی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 07 اکتوبر2021ء) کرکٹ کی عالمی گورننگ باڈی آئی سی سی نے اعلان کیا ہے کہ کھیل میں اب بیٹسمین کو بیٹسمین نہیں کہا جائے گا۔برطانوی میڈیا کے مطابق انٹرنیشنل کرکٹ کونسل نے اپنے بیان میں کہا کہ رواں ماہ ہونے والے ورلڈ ٹی ٹوئنٹی ٹورنامنٹ سے بیٹسمین کیلئے بیٹسمین کی اصطلاح استعمال نہیں کی جائے گی۔

آئی سی سی کا کہنا ہے کہ بیٹسمین کی جگہ صنفی جانبداری سے پاک لفظ ’بیٹر‘ استعمال کیا جائے گا جو کہ خواتین اور مرد دونوں کیلئے استعمال ہوسکے گا۔خیال رہے کہ کرکٹ میں بیٹسمین اس کھلاڑی کو کہتے ہیں جو کریز پر آکر بیٹ کی مدد سے گیند کو مختلف شارٹس لگا کر رنز حاصل کرتا ہے۔اب تک اس کھلاڑی کیلئے بیٹسمین کی اصطلاح استعمال کی جاتی رہی ہے۔

(جاری ہے)

یہ لفظ دو حصوں پر مشتمل ہے، ایک ’بیٹس‘ جس کا مطلب بلا اور دوسرا ’مین‘ جس سے مراد کھلاڑی ہے لیکن مین کا لفظ مردوں کے لیے استعمال ہوتا ہے اور ویمن کرکٹ میچ کے دوران اس لفظ کا استعمال لغوی اعتبار سے غلط ہوتا ہے۔کرکٹ میں خواتین کے بڑھتے ہوئے کردار اور خواتین کرکٹ کی مقبولیت کے بعد یہ فیصلہ کیا گیا ہے کہ بیٹسمین کے بجائے ’بیٹر‘ کا لفظ استعمال کیا جائے تاکہ اس سے مرد یا عورت کو کوئی تاثر ہی نہ جائے۔کرکٹ کے قوانین ترتیب دینے والی اتھارٹی میری لیبون کرکٹ کلب (ایم سی سی) نے گذشتہ ماہ بیٹسمین کے لفظ کو بیٹر سے تبدیل کرنے کی منظوری دی تھی۔خیال رہے کہ ورلڈ ٹی ٹوئنٹی کا آغاز 17 اکتوبر سے عمان اور متحدہ عرب امارات میں ہوگا۔

کرک شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments