اُردو پوائنٹ پاکستان قصورقصور کی خبریںزینب قتل کیس :قصور کی ننی زینب کے والد کا سیاسی قائدین کو خط خط لکھنے ..

زینب قتل کیس :قصور کی ننی زینب کے والد کا سیاسی قائدین کو خط

خط لکھنے کے باوجود صدر ممنون حسین نے مجرم عمران کے رحم کی اپیل مسترد نہیں کی ،عمران خان ، شہباز شریف ،بلاول بھٹو ،سراج الحق اور طاہر القادری انتخابی مہم کے دوران صدر پاکستان پر دباؤ ڈالیں تاکہ مجرم عمران کو عبرتناک سزا دی جاسکے

اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 17 جولائی2018ء)قصور کی ننی زینب کے والد نے عمران خان ،شہباز شریف ،بلاول بھٹو ،سراج الحق اور طاہرالقادری سمیت دیگر سیاسی جماعتوں کے سربراہوں کو خط میں اپیل کی ہے کہ صدر ممنون حسین نے مجرم عمران کی رحم کی اپیل مسترد نہیں کی تاہم سیاسی جماعتوں کی قائدین انتخابی مہم میں صدر مملکت تک دباؤ ڈالیں تاکہ مجرم عمران کو عبرتناک سزا دی جاسکے تفصیلات کے مطابق قصور کی ننی زینب کے بزرگ والد نے پی ٹی آئی چیئرمین عمران خان ،مسلم لیگ ن صدر شہباز شریف ،پیپلزپارٹی چیئرمین بلاول بھٹو اور امیر جماعت اسلامی سراج الحق سمیت پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ طاہر القادری کو خط ارسال کیے ہیں جس میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ ننی زینب کے قتل میں مجرم عمران کی سیشن کورٹ ،انسداد دہشت گردی عدالت ،ہائی کورٹ اور سپریم کورٹ میں رحم کی اپیلیں خارج ہوچکی ہیں لیکن ابھی تک مجرم عمران کی اپیل صدر پاکستان کے پاس پینڈنگ پڑی ہوئی ہے حالانکہ صدر پاکستان ممنون حسین کو مجرم عمران کی اپیل مسترد کرنے کے باری میں خط لکھ چکے ہیں لیکن تاحال اس کی اپیل کو مسترد نہیں کیا گیا لہذا تمام سیاسی قائدین سے درخواست ہے کہ وہ انتخابی مہم کے دوران ممنون حسین پر دباؤ ڈالیں کے چھوٹے چھوٹے بچوں سے گھناؤنے کھیل کھیل کر قتل کرنے والا مجرم عمران رحم کے قابل نہیں بلکہ عبرتناک سزا کے قابل ہے تاکہ آئندہ ایسے جرائم کی روک تھام ہوسکے ۔


اپنی رائے کا اظہار کریں -

قصور شہر کی مزید خبریں