ورکنگ ویمن کے تحفظ کیلئے ہاسٹل اتھارٹی کا قانون جلد منظوری کیلئے پیش کر دیا جائے گا،صوبائی وزیرآشفہ ریاض فتیانہ

منگل اپریل 18:49

قصور۔23 اپریل(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - اے پی پی۔ 23 اپریل2019ء) صوبائی وزیر ویمن ڈویلپمنٹ آشفہ ریاض فتیانہ نے کہا ہے کہ ورکنگ ویمن کے تحفظ کیلئے ہاسٹل اتھارٹی کا قانون جلد منظوری کیلئے پیش کر دیا جائے گا، صوبے میں ابتک 85ڈے کئیر سنٹرز قائم کر دیے گئے، پبلک پرائیویٹ آرگنائزیشنز میں ڈے کئیر سنٹرز کے قیام کیلئے فنڈز کیساتھ ایک سال کے اخراجات حکومت پنجاب برداشت کرے گی، ان خیالات کا اظہار انہوںنے گورنمنٹ حنیفاں بیگم ڈگری کالج برائے خواتین مصطفی آباد قصور میں ڈے کئیر سنٹر کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا، ویمن ڈویلپمنٹ ارم بخاری ، پرنسپل میڈم آمنہ و دیگر بھی موجود تھے۔

ڈے کیئر سنٹر میں بچوں کیلئے کھلونے، ٹی وی، سمیت دیگر سہولیات فراہم کی گی ہیں۔

(جاری ہے)

صوبائی وزیر ویمن ڈویلپمنٹ آشفہ ریاض فتیانہ نے کہا کہ ہاسٹل اتھارٹی کی منظوری کے بعد تمام پرائیویٹ ہاسٹل مالکان کیلئے لائسنس لینا ضروری ہوگا ، انکے یکساں کرایے بھی مقرر کئے جائیں گے۔انہوں نے کہا کہ قانون کے مطابق ہر ادارے میںجہاںایک مقررہ تعداد سے زائد خواتین کام کرتی ہیں وہاں ڈے کیئر سنٹر کا قیام لازمی ہے، صوبے میں مزید 120ڈے کئیر سنٹرز کے قیام کی منظوری دی جاچکی ہے ۔

انہوںنے بتایا کہ آئند ہ مالی سال کے دوران ڈے کیئر سنٹرز کے نگران کیلئے تربیتی کورس کا آغاز کر دیا جائے گا آئندہ ان سنٹرز پر وہی نگران تعینات ہونگے جو تربیت یافتہ ہونگے، صوبے میں دیہی ورکنگ ویمن کی ڈاکومنٹیشن بھی کی جائے گی اور معیشت میں انکے درست حصہ کا بھی تعین کیا جائے گا ، یقینی بنایا جائے گا کہ ریونیو ڈیپارٹمنٹ اور فوڈ ڈیپارٹمنٹ انہیں بھی مرد کسانوں کیطرح سہولیات دے۔

صوبائی وزیر ویمن ڈویلپمنٹ نے کہا کہ خواتین کی ترقی انکے ڈیپارٹمنٹ کا اولین مقصد ہے، خواتین کو مختلف حکومتی اقدامات، ملازمتوں سمیت حکومتی پالیسوں بارے آگاہی کیلئے سہ ماہی ڈیجیٹل رسالے کا اجراء کر دیا گیا ہے۔انہوں نے تمام سرکاری و پرائیویٹ اداروں سے کہا کہ وہ ویب سائٹ سے رجسٹریشن فارم ڈائون لوڈ کرکے اپنے اداروں میں ڈے کئیر سنٹرز کے قیام کیلئے فوری درخواست دیں۔

متعلقہ عنوان :

قصور شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments