حکومت پانچ برآمدی شعبوں کیلئے زیرو ریٹڈ ریجیم کو بحال کرے ‘ پرویز حنیف

آئی ایم ایف کے آگے سر تسلیم خم کرنے کی بجائے اپنے مفادات کو پیش نظر رکھاجائے ‘ چیئر پرسن سی ٹی آئی

ہفتہ 19 جون 2021 13:44

حکومت پانچ برآمدی شعبوں کیلئے زیرو ریٹڈ ریجیم کو بحال کرے ‘ پرویز حنیف
لاہور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 19 جون2021ء) کارپٹ ٹریننگ انسٹی ٹیوٹ کے چیئر پرسن و سابق صدر لاہور چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری پرویز حنیف نے پانچ برآمدی شعبوں کیلئے زیرو ریٹڈ ریجیم کو بحال نہ کرنے کے فیصلے پر گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہاہے کہ دنیا کے ممالک برآمدات میں سہولتیں دے رے ہیں جبکہ ہمار ے ہاںرکاوٹیں ڈالی جارہی ہیں۔

اپنے ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ حکومت آئی ایم ایف کی شرائط کے آگے سر تسلیم خم کرنے کی بجائے اپنے مفادات کو پیش نظر رکھے ، اگر موجودہ حکومت نے بھی برآمدی شعبوں کو تجربات کی بھینٹ چڑھانے کا سلسلہ جاری رکھا تو برآمدات میں اضافے کا رجحان زیادہ دیر بر قرار نہیں رہ سکے گا ۔ انہوں نے کہا کہ ہمارا مطالبہ ہے کہ وزیر اعظم عمران خان اس حوالے سے ہمارے تحفظات کا نوٹس لیں اور زیرو ریٹڈریجیم کی بحالی کامطالبہ کرنے والے برآمدی شعبوں کے ذمہ داران کو مدعو کر کے ان سے تفصیلی بریفنگ لیں تاکہ انہیں اصل حقائق سے آگاہی حاصل ہو سکے ۔

(جاری ہے)

پرویز حنیف نے کہا کہ جوشعبے زیرو ریٹڈ ریجیم بحال کرنے کا مطالبہ کر رہے ہیں وہ سارے اپنی مصنوعات برآمد کر دیتے ہیں اس لئے مقامی مارکیٹوں میں فروخت کے حوالے سے پراپیگنڈا بلا جواز ہے، حکومت کے پاس مشینری موجود ہے اور اگر کوئی مینو فیکچررز اپنی برآمدی مصنوعات مقامی مارکیٹ میں فروخت کر رہا ہے تو اس پر ٹیکس عائد کیا جائے ہم حکومت کے ساتھ ہیں۔ انہوں نے کہا کہ مطالبہ ہے کہ پانچ برآمدی شعبوں کیلئے زیر و ریٹڈ ریجیم کو بحال کیا جائے تاکہ ہماری برآمدات مزید بڑھ سکیں ، اس کے ساتھ ساتھ ریفنڈز کی ادائیگی کو بھی مزید سہل او رانصاف پر مبنی بنایا جائے تاکہ چھوٹے برآمدکنندگان کو سرمائے کی قلت کا سامنا نہ کرنا پڑے۔

لاہور شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments