لاہور میں لو میرج کیس کا انوکھا واقعہ

عدالت میں لڑکی کے والدین کے ساتھ جانے کے بیان پر لڑکے نے زہر کھا لیا، میڈیا رپورٹس

Muqadas Farooq مقدس فاروق اعوان منگل جولائی 12:22

لاہور میں لو میرج کیس کا انوکھا واقعہ
لاہور (اردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔17جولائی 2018ء) لاہور میں لو میرج کیس کا انوکھا واقعہ پیش آیاہے۔تفصیلات کے مطابق لو میرج کیس میں اکثر انوکھے واقعات سامنے آتے ہیں کبھی کبھی ایسا ہوتا کے لو میرج کیس کے دوران بہت نا خوشگوار واقعات پیش آتے ہیں۔اکثر اوقات لڑکی کے اہل خانہ کی طرف سے عدالت میں ہی شور و شرابہ کیا جا تا ہے۔لیکن لاہور میں لو میرج کیس کے دوران ایک انوکھا اور جذباتی واقعہ پیش آیا۔

جب ثوبیہ نامی لڑکی نے اپنے والدین کے ساتھ جانے کا بیان دیا تو لڑکے نے دل برداشتہ ہو کر زہر کھا لیا، قومی اخبار کی ایک رپورٹ کے مطابق لاہور میں لو میرج کیس میں ایک انوکھا واقعہ دیکھنے میں آیا ہے۔لاہور ہائی کورٹ میں لو میرج کیس کی سماعت ہوئی جس کےدوران لڑکی نے ماں باپ کے ساتھ جانے کا بیان دیا تو لڑکا دل برداشتہ ہوگیا۔

(جاری ہے)

کمرہ عدالت سے باہر نکلتے ہی اس نے خودکشی کی کوشش کی، مذکورہ لڑکے احتشام نے جیب سے کوئی زہریلی چیز نکال کر کھا لی جس سے اس کی حالت غیر ہو گئی۔

وکلا نے فوری طور پر لڑکے احتشام کو لاہور ہائی کورٹ کی لیبارٹری پہنچایا جہاں سے بعد میں اسے طبی امداد کے لیے اسپتال منتقل کر دیا گیا۔ میڈیا رپورٹس میں بتایا گیا ہے کہ لڑکے احتشام نے ثوبیہ نامی لڑکی کے ساتھ محبت کی شادی کی تھی۔لڑکی نے لو میرج کرنے کے بعد اپنے والدین کے ساتھ جانے کا بیان کیوں دیا اس کی وجوہات تو سامنے نہیں آ سکیں۔ممکن ہے کہ لڑکی کے والدین نے دباؤ ڈالا ہو جس کی وجہ سے مذکورہ لڑکی نے اپنے والدین کے ساتھ جانےکا بیان دیا ہو۔یا پھر دوسری صورت یہ ہو سکتی ہے کہ لڑکے کا رویہ لڑکی کے ساتھ ٹھیک نہ ہو جس کی وجہ سے اس نے اپنے والدین کے ساتھ جانے کا فیصلہ کیا ہو۔واضح رہے کہ لڑکے احتشام نے ثوبیہ نامی لڑکی کے ساتھ محبت کی شادی کی تھی۔

لاہور شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments