اُردو پوائنٹ پاکستان لاہورلاہور کی خبریںصوبائی وزیر سکولز ایجوکیشن کا ساہیوال میں طالبعلم پر جسمانی تشدد کی ..

صوبائی وزیر سکولز ایجوکیشن کا ساہیوال میں طالبعلم پر جسمانی تشدد کی اطلاع پر فوری ایکشن ، واقعہ میں ملوث ٹیچر معطل

پنجاب حکومت جسمانی تشدد کیخلاف زیرو ٹالرنس کی پالیسی پر عمل پیرا ہے، مراد راس

لاہور۔19 ستمبر(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 19 ستمبر2018ء)صوبائی وزیر سکولز ایجوکیشن مراد راس نے گورنمنٹ بوائز ہائی سکول 148/9-Lساہیوال میںتیسری جماعت کے طالبعلم پر جسمانی تشدد کی اطلاع پر فوری ایکشن لیتے ہوئے اس افسوسناک واقعہ میں ملوث ٹیچرعبدالحنان کو ملازمت سے فوری طور پر معطل کر دیا ہے، صوبائی وزیر سکولز ایجوکیشن کے حکم پر ٹیچر کے خلاف پیڈا ایکٹ کے تحت کارروائی کا آغاز بھی کر دیا گیا ہے،صوبائی وزیر مراد راس نے کہا ہے کہ صوبہ پنجاب میں طالبعلموں پر جسمانی تشدد پر سختی سے پابندی عائد ہے،انہوں نے کہا کہ اساتذہ کے تربیتی نصاب میں جسمانی تشدد کی ممانت سے متعلق مواد شامل کیا جائے گا، انہوں نے کہا کہ محکمہ سکولز ایجوکیشن طالبعلموںکو بہترین تعلیمی ماحول مہیا کرنے کی پالیسی پر کاربند ہے، انہوں نے مزید کہا کہ پنجاب حکومت جسمانی تشدد کے خلاف زیرو ٹالرنس کی پالیسی پر عمل پیرا ہے،صوبائی وزیر نے کہا کہ چیف ایگزیکٹو ایجوکیشن آفیسرز جسمانی تشدد پر مکمل پابندی کو یقینی بنائیں۔



اپنی رائے کا اظہار کریں -

لاہور شہر کی مزید خبریں