اُردو پوائنٹ پاکستان لاہورلاہور کی خبریںنندی پور: نیب کا خواجہ آصف کیخلاف جلد کاروائی کا امکان نیب خواجہ آصف ..

نندی پور: نیب کا خواجہ آصف کیخلاف جلد کاروائی کا امکان

نیب خواجہ آصف کیخلاف نندی پور کا کیس کھولنا چاہتا ہے، کیپٹن ر محمود نے 35 کروڑ کا ڈیزل بیچ کر ریکارڈ کو آگ لگا دی تاہم اس میں خواجہ آصف کا کیا قصور ہے؟ سینئر صحافی جاوید چوہدری کا انکشاف

لاہور(اُردوپوائنٹ اخبارتازہ ترین۔18 اکتوبر 2018ء) نیب نے سابق وزیرپانی و بجلی خواجہ آصف کے خلاف کرپشن کے الزام میں گھیرا تنگ کرنے کا فیصلہ کرلیا، سینئر صحافی جاوید چودھری کا کہنا ہے کہ نیب خواجہ آصف کیخلاف نندی پور کا کیس کھولنا چاہتا ہے، کیپٹن ر محمود نے 35 کروڑ کا ڈیزل بیچ کر ریکارڈ کو آگ لگا دی تاہم اس میں خواجہ آصف کا کیا قصور ہے؟ انہوں نے نجی ٹی وی کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ نیب خواجہ آصف کیخلاف بھی کیس بنانا چاہتا ہے ۔

میرا خیال ہے کہ خواجہ آصف کے خلاف نندی پور کا کیس کھل رہا ہے۔ نندی پور کے سی ای او کیپٹن ر محمود کا تقرر سابق وزیراعلیٰ شہبازشریف نے کیا تھا۔کیپٹن محمود نے نندی پور پاور پلانٹ کو جلدی میں چلا دیا تھا اور پلانٹ کی مرمت کا ٹھیکہ بھی اپنی مرضی کی کمپنی کو دے دیا تھا۔

(خبر جاری ہے)

ان لوگوں نے 35 کروڑ کا ڈیزل بیچ کر ریکارڈ کو آگ لگا دی تاہم اس میں خواجہ آصف کا کیا قصور ہے؟ واضح رہے نیب نے مسلم لیگ ن کے صدر اور اپوزیشن لیڈر شہبازشریف کو آشیانہ اسکینڈل
میں اختیارات سے تجاوز کے الزام میں گرفتار کررکھا ہے۔

احتساب عدالت نے
شہبازشریف کو مزید 14روزہ جسمانی ریمانڈ پر نیب کے حوالے کررکھا ہے۔ دوسری جانب سولہ اکتوبر کو سابق وفاقی وزیر خواجہ سعد رفیق
اور ان کے بھائی خواجہ سلمان رفیق نے پیراگون ہائوسنگ سوسائٹی کیس میں نیب
آفس پیش ہوکر بیان قلمبند کروائے ۔ بتایا گیا ہے کہ نیب لاہور نے
ہائوسنگ کرپشن اسکینڈل میں خواجہ برادران کو کو طلب کیا تھا اور دونوں نیب
لاہور کے دفتر میں پیش ہوئے جہاں نیب کی 3 رکنی تحقیقاتی ٹیم نے خواجہ سعد
رفیق اور سلمان رفیق سے الگ الگ تحقیقات کی اور دونوں بھائی ایک گھنٹے تک
نیب دفتر میں رہے۔

ممکنہ گرفتاری کے پیش نظر خواجہ برادران ہائیکورٹ سے
پہلے ہی عبوری ضمانت کراچکے ہیں۔ ذرائع کے مطابق خواجہ برادران پر پیراگون
سٹی میں حصہ دار ہونے کا الزام ہے جب کہ ان پر پیراگون سٹی کے ذریعے آشیانہ
اقبال سے فوائد لینے کا بھی الزام ہے۔ خواجہ سعد رفیق اور خواجہ سلمان
رفیق اس سے قبل بھی 3 مرتبہ نیب کو اپنا بیان ریکارڈ کرا چکے ہیں اور ان کی
جانب سے نیب سوالنامے کا جواب بھی جمع کرایا جا چکا ہے۔

یاد رہے کہ نیب کی
تین رکنی تحقیقاتی ٹیم پیراگون ہائوسنگ سوسائٹی میں مبینہ طور پر کی جانے
والی کرپشن کی تحقیقات کر رہی ہے۔اس سے قبل نیب نے مسلم لیگ (ن)کے صدر اور
سابق وزیراعلی پنجاب شہباز شریف کو صاف پانی اسکینڈل کی تحقیقات کے لیے طلب
کیا تھا اور انہیں آشیانہ اقبال ہائوسنگ اسکیم اسکینڈل میں دفتر سے ہی
گرفتار کرلیا گیا تھا۔

اپنی رائے کا اظہار کریں -

لاہور شہر کی مزید خبریں