اُردو پوائنٹ پاکستان لاہورلاہور کی خبریںاحمد چیمہ کیخلاف آمدن سے زائد اثاثہ جات بنانے کے کیس میں ریفرنس احتساب ..

احمد چیمہ کیخلاف آمدن سے زائد اثاثہ جات بنانے کے کیس میں ریفرنس احتساب عدالت میں دائر

, احتساب عدالت کے جج نجم الحسن 31اکتوبر کو ریفرنس کی سماعت کرینگے ،نیب پراسیکیوٹر اپنے دلائل دینگے‘ذرائع

لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 18 اکتوبر2018ء)قومی احتساب بیورو ( نیب ) لاہور نے سابق ڈائریکٹر جنرل لاہور ڈویلپمنٹ اتھارٹی احمد چیمہ کیخلاف آمدن سے زائد اثاثہ جات بنانے کے کیس میں ریفرنس احتساب عدالت میں دائر کر دیا ۔احتساب عدالت کے جج نجم الحسن 31اکتوبر کو ریفرنس کی سماعت کرینگے جہاں نیب پراسیکیوٹر اپنے دلائل دینگے۔ذرائع کے مطابق ریفرنس میں الزام عائد کیا گیا ہے کہ ملزم نے مبینہ طور پر اپنے،اہلیہ اور خاندان کے دیگر افراد کے نام اربوں روپے مالیت کی کثیر بے نامی جائیدادیں بنائیں،ملزم کی جائیدادوں میں متعدد پلاٹس،زرعی زمینیں ،فلیٹس اور مکانات شامل ہیں ۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق ملزم کے اثاثہ جات میں ایل ڈی اے ایونیومیں پلاٹ نمبر 701،بینک الفلاح امپلائیز ہائوسنگ سوسائٹی 2پلاٹس, 123 کنال زرعی زمین بمقام بھیک احمد یار, حافض آباد،ملزم کے نام دیگر جائیدادوں میں 188 کنال 12 مرلہ اور 123 کنال 19 مرلہ زرعی زمین بمقام گاں بھیک, احمد یار ضلع حافظ آباد جبکہ آء بی کوآپریٹو ہاسنگ سوسائٹی, اسلام آباد میں پلاٹ بھی شامل ہیں ۔

(خبر جاری ہے)

اس کے ساتھ ویلیج کرباتھ, تحصیل کینٹ میں 3 کنال زمین اپنے نام جبکہ 14 کنال 7 مرلہ زمین اپنے اور دیگر اہل خانہ کے نام شامل ہیں ، ماڈل ٹائون میں 48کنال 10مرلہ زمین اپنے اور والدہ کے نام پائی گئی ، موضع ڈھوری لاہور میں اہلیہ کے نام 21کنال 4مرلہ زمین بھی شامل ہے ،موضع ٹیڈھا میں کل 99 کنال 17 مرلہ زمین اپنے اور خاندان کے دیگر افراد کے نام پائی گئی ہے ۔

جبکہ ملزم احد چیمہ کے نام ہل لاک ویو اسلام آباد میں 1 فلیٹ جبکہ سیکٹر آئ-15 میں بھی 1 فلیٹ موجود ہے ۔ رپورٹ کے مطابق ایف آئی اے ایمپلائیز کوآپریٹو ہاسنگ سکیم اسلام آباد میں ملزم کے نام 2 پلاٹس جبکہ پی ایچ اے فانڈیشن میں بھی پلاٹس پائے گئے،اسکے علاوہ فیصل ٹان, اسلام آباد میں 10 مرلہ کا پلاٹ اور فیصل ریزی ڈینشیا, اسلام آباد میں 5 مرلہ کا پلاٹ ملزم کے اپنے نام ظاہر ہوا۔

بہن کے نام فیصل ریزی ڈینشیا میں 5 مرلہ پلاٹ اور بیدیاں روڈ پر 3 کنال زمیں پائی گئی ۔رپورٹ کے مطابق ملزم کے نام قیمتی پلاٹس اور زرعی زمینوں کی مالیت مبینہ طور پر اربوں روپے میں جا سکتی ہیں۔یاد رہے کہ نیب لاہور نے ملزم احد خان چیمہ کو 15فروری 2018ء کو آشیانہ اقبال کرپشن کیس میں گرفتار کیا تھا ، دوران تحقیقات ملزم کے نام اربوں روپے مالیت کے اثاثہ جات ہونے کا انکشاف ہوا تھا۔آشیانہ اقبال کیس میں ملزم احد چیمہ کیخلاف 660ملین کی مبینہ کرپشن کا پہلا ریفرنس 22جون کو احتساب عدالت لاہور میں دائر کیا گیا تھا۔

اپنی رائے کا اظہار کریں -

لاہور شہر کی مزید خبریں