اُردو پوائنٹ پاکستان لاہورلاہور کی خبریںشیخ الاسلام انتخابی عمل میں خلل ڈالنے آئے ہیں، نواز شریف

شیخ الاسلام انتخابی عمل میں خلل ڈالنے آئے ہیں، نواز شریف

لاہور (اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔ 3جنوری2013ء) مسلم لیگ ن کے قائد میاں نواز شریف نے کہا ہے کہ چند ہزار لوگ 18 کروڑ عوام کو یرغمال نہیں بناسکتے، شیخ الاسلام انتخابی عمل میں خلل ڈالنے کیلئے آئے ہیں، ان کا ایجنڈا انتخابات سبوتاژ کرنے کے سوا کچھ نہیں، کس چیز کیلئے لانگ مارچ کیا جارہا ہے، انتخابات میں 2 ہفتے رہ گئے ہیں، سب کچھ مسلم لیگ ن پر نقب لگانے کیلئے کیا جارہا ہے۔

لاہور میں طلال بگٹی سے ملاقات کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے نواز شریف کا کہنا ہے کہ شیخ الاسلام انتخابی عمل میں خلل ڈالنے کیلئے آئے ہیں، ہم اس کھیل تماشے کی اجازت نہیں دے سکتے، حکومت کے اتحادی حکومت کے خلاف لانگ مارچ میں شامل ہو رہے ہیں، نائب وزیراعظم اور دیگر وزرا حکومت کے خلاف لانگ مارچ کر رہے ہیں، ق لیگ سے ووٹرز کو پوچھنا چاہئے کہ وہ شیخ السلام کے ساتھ ہے یازرداری کے ساتھ، کسی ایک کا ساتھ دیں، دونوں طرف کیسے، اسی سیاست نے یہ دن دکھایا ہے ۔

(خبر جاری ہے)

انہوں نے کہا کہ چند ہزار لوگ 18 کروڑ عوام کو یرغمال نہیں بناسکتے، انتخابات میں 2 ہفتے رہ گئے ہیں اور اب قوم کا درد جاگ رہاہے، کس چیز کیلئے آپ لانگ مارچ کررہے ہیں، اس سے پہلے کہاں تھے، انہوں نے کہا کہ تحریر اسکوائر میں وہ لوگ آئے جنہوں نے ڈکٹیٹر شپ سے ملک کو آزادی دلائی، تحریر اسکوائر والوں کا ماضی صاف تھا۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں ذاتی مفاد سے زیادہ بلوچستان عزیز ہے، اسلام کے نام پر پیسا مانگنا اور اسے لانگ مارچ پر خرچ کرنا کہاں کا اسلام ہے، یہ غریب لوگوں سے کہہ رہے ہیں زیور بیچیں، موٹر سائیکل بیچیں، یہ ظلم ہے، ہمیں اس قسم کے لوگوں سے لیکچر نہیں چاہئے، پاکستانی قوم کو مت ورغلاوٴ، ہمیں لیکچر نہ دیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ شیخ الاسلام کا ایجنڈا پاکستان کے انتخابات کو سبوتاژ کرنے کے سوا کچھ نہیں، وہ کس کو الٹی میٹم دے رہے ہیں، کیا عوام بے وقوف ہیں، سب کچھ مسلم لیگ (ن) پر نقب لگانے کیلئے کیا جا رہا ہے۔ نواز شریف کا کہنا ہے کہ شیخ الاسلام پرویز مشرف کے دست راست رہے، ق لیگ والوں نے تو اس حد تک کہا کہ پرویز مشرف کو 10 بار منتخب کرائیں گے،جولندن سے بولتے ہیں وہ بھی مشرف کے ساتھی ہیں، تحریک انصاف بھی پرویز مشرف کی ساتھی ہے، ہم پرویز مشرف کیخلاف ہیں۔

انہوں نے کہا کہ شیخ الاسلام کہتے ہیں کہ نگران حکومت کو الٹا دیں گے یا الٹ جائیں گے ، پیپلزپارٹی جہاں ہے اسے وہاں رہنے دیں، ہمیں اپنا کام کرنے دیں۔ اس موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے طلال بگٹی نے کہا کہ ایک چھتری تلے انتخابات میں حصہ لیں گے، امپورٹڈ عوام کے ایجنڈے سے ملک کو پاک رکھنے کی ضرورت ہے۔

اپنی رائے کا اظہار کریں -

لاہور شہر کی مزید خبریں