بھارتی سپریم کورٹ کا بابری مسجد کا فیصلہ تعصب پر مبنی ہے‘عظمی بخاری

دنیا کی سب سے بڑی جمہوریت کا دعویدار بھارت اقلیتوں کیلئے محفوظ نہیں ہے‘رہنما (ن)لیگ

ہفتہ نومبر 15:10

لاہور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 09 نومبر2019ء) مسلم لیگ (ن) پنجاب کی ترجمان عظمیٰ بخاری نے کہا ہے کہ بھارتی سپریم کورٹ کا بابری مسجد کا فیصلہ تعصب پر مبنی ہے،بھارت میں انتہا پسند وں کا ہر جگہ پر اثر رسوخ ہے،دنیا کی سب سے بڑی جمہوریت کا دعویدار بھارت اقلیتوں کیلئے محفوظ نہیں ہے۔عظمیٰ بخاری نے بھارتی سپریم کورٹ کے فیصلے پر اپنے ردعمل میں کہا کہ مودی کے دور حکومت میں بھارتی اقلیتوں کے ساتھ سب سے زیادہ ناانصافیاں ہوئی ہیں۔

(جاری ہے)

بھارتی عدلیہ بھی مودی کے نقش قدم پر چل رہی ہے۔مودی حکومت تاثر دے رہی ہے کہ بھارت صرف ہندوں کیلئے ہی ہے۔6دسمبر 1992کو ہندو انتہا پسندوں نے بابری مسجد کو شہید کیا ۔بابری مسجد کو آر ایس ایس کے غنڈوں نے شہید کیا۔مودی اسی انتہاپسند تنظیم کا سرگرم رکن رہا ہے۔انتہا پسند مودی کشمیر میں نہتے مسلمانوں کو جبر و ظلم کررہا ہے ۔مقبوضہ کشمیر میں گزشتہ تین ماہ سے کرفیو کا سما ء ہے۔مودی نے مقبوضہ کشمیر کے بعد بھارت میں مسلمانوں کیلئے زمین تنگ کردی ہے۔

لاہور شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments