ایف بی آر نے جولائی تا نومبر 1688ارب روپے کانیٹ ریوینیو حاصل کیا ،مقر ر کردہ ہدف 1669 ارب روپے تھا

گزشتہ سال اس عرصے میں 1623 ارب رو پے نیٹ ریونیو حاصل کیا گیاتھا،گراس ریونیو 1773ارب روپے اکھٹا کیا گیا

منگل دسمبر 23:46

ایف بی آر نے جولائی تا نومبر 1688ارب روپے کانیٹ ریوینیو حاصل کیا ،مقر ..
لاہور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 01 دسمبر2020ء) فیڈرل بورڈ آف ریوینیو نے رواں مالی سال جولائی تا نومبر 1688ارب روپے کانیٹ ریوینیو حاصل کیا ہے جبکہ مقر ر کردہ ہدف 1669 ارب روپے تھا۔ گزشتہ سال اس عرصے میں 1623 ارب رو پے نیٹ ریونیو حاصل کیا گیاتھا۔اعدادوشمارکے مطابق انکم ٹیکس کی مد میں 577ارب ، سیلز ٹیکس کی مدمیں743 ارب، فیڈرل ایکسائز ڈیوٹی 104 ارب اور کسٹمز ڈیوٹی کی مدمیں آمد264 ارب رہی۔

ایف بی آر نے مالی سال کے پہلے پانچ ماہ میں گراس ریونیو 1773ارب روپے اکھٹا کیا ہے جو کہ گزشتہ مالی سال کے پہلے پانچ ماہ میں1664ارب روپے تھا ۔ اس طرح اس سال جولائی تانومبر 109 ارب روپے گراس ریونیومیں اضافہ حاصل ہواہے۔نومبر میں محاصل کی مد میں 347ارب روپے حاصل ہوئے جبکہ مقرر کردہ ہدف 348 ارب روپے تھا۔

(جاری ہے)

رواں مالی سال جولائی تا نومبر80ارب روپے کے ریفنڈز جاری ہوئے جبکہ گزشتہ سال سال جاری کردہ ریفنڈز 41 ارب روپے کے تھے۔

ماہ نومبر میں 17 ارب سے زائدکے ریفنڈز جاری ہوئے ہیں جو کہ پچھلے سال نومبر میں 4 ارب تھے۔ریفنڈز میں اضافہ کے باوجود ایف بی آر نے امسال نومبر میں پچھلے سال نومبرکے محاصل کے مقابلہ میں زائد ریونیو حاصل کیا ہے۔رواں مالی سال کے پہلے پانچ ماہ میں سمگل شدہ اشیا ء جن کی مالیت 27ارب روپے ہے ضبط کی گئی ہیں جبکہ پچھلے سال پہلے پانچ ماہ میں 18ارب روپے مالیت کی اشیا ضبط ہوئی تھی۔

متعلقہ عنوان :

لاہور شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments