"عمران خان آپ نے عوام کو جینے کے قابل نہیں چھوڑا، اب آپ کا گریبان ہوگا اور عوام کا ہاتھ ہوگا"

تم ریاست ، عدالت ، پارلیمان کو دھمکیاں دے رہے تھے ،عمران خان کرسی چھین جانے کے خوف میں مبتلا، آپ بچ نہیں سکتے، سینئر لیگی رہنما مریم اورنگزیب

Danish Ahmad Ansari دانش احمد انصاری منگل 25 جنوری 2022 05:29

"عمران خان آپ نے عوام کو جینے کے قابل نہیں چھوڑا، اب آپ کا گریبان ہوگا اور عوام کا ہاتھ ہوگا"
لاہور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - 25 جنوری2022ء) تم ریاست ، عدالت ، پارلیمان کو دھمکیاں دے رہے تھے ،عمران خان کرسی چھین جانے کے خوف میں مبتلا، آپ بچ نہیں سکتے، آپ نے عوام کو جینے کے قابل نہیں چھوڑا، اب آپ کا گریبان ہوگا اور عوام کا ہاتھ ہوگا، سینئر لیگی رہنما مریم اورنگزیب- تفصیلات کے مطابق پاکستان مسلم لیگ (ن) کی ترجمان مریم اور نگزیب نے وزیراعظم عمران خان پر قومی سلامتی کو خطرے میں ڈالنے کا الزام عائد کرتے ہوئے کہا ہے کہ عمران خان کی دھمکی کس کیلئے تھی جب نوازشریف وزیر اعظم تھے ، تم ریاست ، عدالت ، پارلیمان کو دھمکیاں دے رہے تھے ،عمران خان کرسی چھین جانے کے خوف میں مبتلا، آپ بچ نہیں سکتے، آپ نے عوام کو جینے کے قابل نہیں چھوڑا، اب آپ کا گریبان ہوگا اور عوام کا ہاتھ ہوگا،شہباز شریف کو کریمنل کہنے کی ہمت کیسے ہوئی آپ کو گھر بھیجنے کیلئے ہر عوامی اور سیاسی حربہ استعمال کریں گے، ہم آپ کی طرح ایمپائر کی انگلی کی دھمکی نہیں دیتے،عمران خان عوام پر رحم کریں اور اقتدار چھوڑدیں۔

(جاری ہے)

وہ پیر کو ڈاکٹر طارق فضل چوہدری اور بلال کیانی کے ہمراہ میڈیا سے گفتگو کررہی تھیں ۔ مریم اورنگزیب نے کہاکہ گزشتہ روز ملک کے مسلط وزیراعظم نے عوام سے جس طرح مخاطب ہوئے ان کی ذہنی توازن کی شدت مزید بڑھ گئی ہے ،یہ شخص کیا اب برسر اقتدار رہنے کے قابل ہے جو عوام، ریاست اور پارلیمان کو دھمکی دیتا ہے ۔ انہوںنے کہاکہ گزشتہ روز کی تقریر ایک نااہل، چور اور اقتدار کے ہوس میں مبتلا شخص کی تقریر تھی ،اب اسے معلوم ہوچکا ہے کہ وہ اب گھر جارہا ہے،ساڑھے تین سال کنٹینرز پر چڑھ کر کہتا رہا میں چھوڑونگا نہیں ،اب ساڑھے تین سال حکمرانی کے بعد بھی کہتا ہے اب میں چھوڑوں گا نہیں ،اب خدا کا واسطہ ہے اس قوم کی جان چھوڑ دیں، آپ نے ساڑھے تین ارب کا ڈاکہ ڈالا اب وہ خوف کا شکار ہے ۔

انہوںنے کہاکہ آپ کو آر ٹی ایس ایس کو بٹھا کر اور بیساکھیوں کے سہارے لایا گیا، اب یہ پول وہ خود کھول رہے ہیں ،جو منتخب ہوکر آتے ہیں وہ دھمکاتے نہیں عوام کے پاس جاتے ہیں ۔ انہوںنے کہاکہ عمران صاحب جب آپ سڑکوں پر غلاظت ڈھیر لگا رہے تھے اس وقت وزیراعظم نواز شریف اور وزیر اعلی شہباز شریف تھے ،آپ آج آپ کہتے ہیں آپ دفتر بیٹھ کر گھٹیا باتیں سنتا ہوں، گھٹیا باتیں عوام نہیں آپ اس کرسی پر بیٹھ کر کررہے ہیں، آپ اس کرسی کی تضحیک کررہے ہیں ،آپ نے عوام کو بے روزگار، ملک کو کنگال اور معیشت کو تباہ کردیا ہے ،آپ کو خوف اس لئے کہ آپ نااہل ہیں، آپ چور ہیں۔

انہوںنے کہاکہ آپ نے باپ کے سامنے بیٹی کو ہتھکڑیاں لگائیں، نواز شریف، شہباز شریف کو موت کی چکیوں میں رکھا ،عدالتوں سے فیصلے لے کر ن لیگی قیادت و کارکن سرخرو ہوئے ہیں ۔ انہوںنے کہاکہ آپ نے جو الزام اپوزیشن پر لگائے ان جرموں کے مجرم آپ خود ہیں ،آپ کس کو دھمکا رہے ہیں ہم آپ کے تمام الزامات میں سرخرو ہوئے ہیں ۔ انہوںنے کہاکہ جب آپ اخلاقیات کا جنازہ نکال رہے تھے اس وقت نواز شریف، شہباز شریف موٹروے، بجلی بنارہے تھے، دہشت گردی ختم کررہے تھے ،آپ جس شہباز شریف کو الزام لگا رہے ہیں وہ آپ کے غلاظت کے دور میں منصوبے لگا رہے تھے جس پر آپ آج تختیاں لگا رہے ہیں ،آپ دھمکیاں مت دیں، اب آپ عوام میں آئیں، عوام کا ہاتھ ہوگا، آپ کا گریبان ہوگا ۔

انہوںنے کہاکہ نواز شریف اپنی بیٹی کا ہاتھ پکڑ کر واپس آیا تھا، شہباز شریف سرخرو ہوا ہے ،عمران خان تم کس کو دھمکیاں دے رہے ہو تم ریاست کو، عدالت کو، پارلیمان کو دھمکیاں دے رہے تھے ،آپ کے جھوٹے الزامات نے ہمارا خوف ختم کردیا ہے۔ مریم اور نگزیب نے کہاکہ آپ کی جرات کیسے ہے آپ شہباز شریف کو کریمنل کہہ رہے ہو ،آپ کو بے گناہ لوگوں کو سزائے موت کی چکیوں میں ڈالنے کا حساب دینا ہوگا ۔

انہوںنے کہاکہ ملک کو تباہ کرنے والا، بچوں کو 50 ہزار ارب کے قرضوں میں دبانے والا کریمنل ہے وہ آپ ہیں ،چینی اپنے ہاتھوں سے ملک سے باہر بھجوانے والا، گندم باہر بھجوا کر منگوانے والا آپ جیسا کریمنل ہوتا ہے ،بی آر اٹی پشاور پر 75 ارب کا ڈاکہ ڈالنے والا آپ جیسا کریمنل ہوتا ہے۔ انہوںنے کہاکہ بلین ٹری سونامی کرپشن، کوویڈ فنڈ کرپشن، غیر قانونی فارن فنڈنگ والا آپ جیسا کریمنل ہوتا ہے ،یوریا بھاری قیمت پر بیچنے والا، توشہ خانہ اور رنگ روڈ پر پیسہ کھانے والا آپ جیسا ہوتا ہے ،شہباز شریف نے عوام کو جو منصوبے دیئے جس نے ایک کھرب کی بچت دی ،جس پر تم تختیاں لگاتے ہو، وہ شہباز شریف ذاتی کاروبار کو نقصان پہنچا کر ڈیڑھ کھرب بچایا ۔

انہوںنے کہاکہ شہباز شریف کو پارلیمان نے ووٹ دیا، شہباز شریف کو عوام نے منتخب کیا ،اصل کریمنل جس نے ملک کو کنگال کیا، معیشت کو داؤ پر لگایا، جس نے منی لانڈرنگ کی وہ ہے ،اب اس کا جواب دینے کا وقت ہے جس عوام کو بے یارو مددگار چھوڑ دیا، اب تمہیں سیاسی شہید نہیں بننے دیں گے ،تمہیں صرف نکالیں گے نہیں تمہیں کان سے پکڑ کر نکالیں گے ،تم ڈیل ڈیل کی باتیں کرتے ہو، تمہارے خلاف تمام آئینی و قانونی کے حق استعمال کرتے ہوئے کان پکڑ کر نکالیں گے ۔

انہوںنے کہاکہ تم نے سقوط ڈھاکہ کیا ہے، جس کرسی پر بیٹھے ہو وہ تمہاری نہیں، تم بیساکھیوں کے ذریعے آئے ،تم نے پاکستان کی قومی سلامتی کو کمزور کیا، تم نے وفاق، اس کی اکائیوں کو کمزور کیا ۔ انہوںنے کہاکہ تمہاری نالائقی کی وجہ سے دہشت گردی پھر بڑھ گئی جس کی کمر نواز شریف نے توڑی ،وزیراعظم کی تقریر ایک گھبرائے ہوئے، ڈرے ہوئے مایوس شخص تھی ،عوام کو خوش ہونا چاہیئے کہ اب اس نا اہل کے جانے کا وقت آگیا ہے۔

مریم اور نگزیب نے کہاکہ میاں نواز شریف علاج کے لئے گئے، اس حکومت نے میڈیکل رپورٹ دی تھی کہ ہمارے پاس نواز شریف کی بیماری کا علاج نہیں ہے ،ان کی وزارت داخلہ نے سرٹیفکیٹ دیا تھا کہ وہ علاج کرانے جائیں ،میاں نواز شریف باہر بیٹھ کر بھی پاکستان سیاست کا محور ہیں،باہر بیٹھے نواز شریف سے یہ حکمران خوفزدہ ہیں،آج بھی پاکستان کی سیاست کا محور میاں نواز شریف اور شہباز شریف ہیں ۔

لاہور شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments