جماعت اسلامی نے 6فروری سے ملک بھر میں دھرنوں کا اعلان کر دیا

ًمارچ میں حکومت کے خلاف اسلام آباد میں فیصلہ کن دھرنا دیں گی: امیر العظیم سیکرٹری جنرل جماعت اسلامی

بدھ 26 جنوری 2022 20:00

 جماعت اسلامی نے 6فروری سے ملک بھر میں دھرنوں کا اعلان کر دیا
لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - آن لائن۔ 26 جنوری2022ء) سیکرٹری جنرل جماعت اسلامی پاکستان امیرالعظیم نے کہاہے کہ پاکستان میں سیاسی پارٹیوں کی بجائے 40چوروں کی حکومت ہوتی ہے، جونادیدہ اشاروں پرہربارنیا علی بابا منتخب کرکے قوم پرمسلط کرتے ہیں،جماعت اسلامی عوامی مسائل کے حل اور ظالمانہ نظام کے خلاف 101احتجاجی دھرنے دے گی، 6فروری سے تحصیل،صوبائی وقومی حلقوں اور ضلعی ہیڈکواٹرز پر احتجاجی دھرنوں کاآغازہوجائے گا، جس کی پلاننگ کرلی گئی۔

مارچ میں اسلام آباد کافیصلہ کن دھرنا حکومت کے ہوش اڑانے کے لیے کافی ہوگا۔ عمران خان سے حکومت نہیں چل پارہی، وہ عوام کی جان چھوڑ دیں۔ا ن خیالات کااظہارانھوں نے جماعت اسلامی شمالی پنجاب کے صوبائی اجلاس کے بعد سیدمودودیؒ بلڈنگ میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔

(جاری ہے)

اس موقع پر امیر صوبہ ڈاکٹرطارق سلیم،صوبائی سیکرٹری جنرل اقبال خان،نائب امیرصوبہ حافظ تنویراحمد،صوبائی ڈپٹی سیکرٹری جنرل رسل خان بابر،قاضی محمدجمیل، مرکزی میڈیا کوآرڈینیٹرایس اے شمسی، صوبائی سیکرٹری اطلاعات انعام الحق اعوان،امیرضلع راولپنڈی سیدعارف شیرازی سمیت دیگرذمہ داران بھی موجود تھے۔

امیرالعظیم نے کہاکہ عوام کا ووٹ بیلٹ باکس میں دفن کردیاجاتاہے۔ ہماری جنگ کسی ایک پارٹی یاحکومت سے نہیں بلکہ اس استعماری نظام سے ہے جو اشرافیہ کے محلات کوتحفظ دیتا اور غریب کی جھونپڑی کوزمین بوس کرتا ہے۔ کچھ عرصے بعد نیابت کھڑ ا کیا جاتا ہے جب عوام اس سے نجات کے لیے جدوجہد شروع کرتے ہیں، توامید کے نام پرنیا گھوڑا میدان میں اتاردیا جاتا ہے۔

مختلف پارٹیوں کے جھنڈے اٹھا کرہربارحکومت کا حصہ بننے والے ظالم جاگیرداراورکرپٹ سرمایہ دارعوام کے مسائل حل کرنے کی صلاحیت نہیں رکھتے۔ جماعت اسلامی اس قوم کے لیے امیدہے۔ سیکرٹری جنرل جماعت اسلامی نے کہا کہ تعلیم،صحت،روزگارکے مسائل پربیانیہ دینے کی بجائے عملی طورپریہ خدمت سرانجا م دے رہے ہیں۔ ہم محدود وسائل کے ساتھ لاکھوں بچوں کوتعلیم کی سہولت فراہم کررہے ہیں۔

آغوش سمیت گھروں پریتیم بچوں کی کفالت کامنظم اورمربوط نظام موجود ہے،اسی طرح ہزاروں ہسپتالوں،بیسک ہیلتھ یونٹ اور ڈائیگناسٹک سنٹرزسے کروڑوں افراد مستفید ہورہے ہیں۔صاف پانی پاکستانی عوام کا ایک بڑا مسئلہ ہے ۔ جماعت اسلامی واٹرفلٹریشن پلانٹس کی صورت اپنے اداروں کے ذریعے عوام کو پینے کا صاف پانی فراہم کررہی ہے۔ کوروناکے دوران جان کی قربانی دے کرجماعت اسلامی کے رضاکاروں نے خدمات سرانجام دیں، زلزلے،سیلاب سمیت ہرقدرتی آفت میں جماعت اسلامی کے کارکن صف اوّل پرعوام کی خدمت کرتے نظرآتے ہیں۔

حالیہ برفباری کے ڈیزاسٹرمیں مری میں پھنسے سیاحوں کوریسکیوکرنے کے لیے سب سے پہلے جماعت اسلامی پہنچی۔ہم محدودوسائل سے اس قدرخدمت سرانجا م دے سکتے ہیں، توحکومتی وسائل سے یقینا عوام کے مسائل کوحل کرنے کی بھرپورصلاحیت رکھتے ہیں۔

لاہور شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments