آبادی کو کنٹرول نہ کیا گیا تو آئندہ 30سالوں میں ملکی آبادی 45کروڑ تک پہنچ جائیگی،کرنل(ر) ہاشم ڈوگر

جمعرات اپریل 15:35

لاہور۔18 اپریل(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - اے پی پی۔ 18 اپریل2019ء) صوبائی وزیر بہبود آبادی کرنل(ر) ہاشم ڈوگر نے کہا ہے کہ اگر بڑھتی ہوئی آبادی کو نہ روکا گیا تو آئندہ آنے والے 30 سالوں میں ملک کی آبادی 22کروڑ سے بڑھ کر 45کروڑ تک پہنچ جائے گی۔ان کا کہنا تھا کہ اس وقت صوبہ پنجاب کی آبادی جو کہ 11کروڑ ہے،آئندہ25 سالوں میں22 سے 25کروڑ تک بڑھ جائے گی جو کہ انتہائی خطرناک ہے۔

ان خیالات کا کا اظہار صوبائی وزیر نے دوسری انٹرنیشنل سٹوڈنٹس کنونشن اینڈ ایکسپو2019ء میں شریک طلباء سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ یہ ایک خوش آئند بات ہے کہ پاکستان ایشیاء میں افغانستان کے بعد دوسرا ملک ہے جس میں نوجوانوں کی تعداد سب سے زیادہ ہے۔ انہوںنے کہا کہ مجھے فخر ہے کہ ان والدین پر جو اپنی بچیوںکو بوجھ نہ سمجھتے ہوئے تعلیم کے زیور سے آراستہ کرتے ہیں اور انہیں اپنے پیروں پر کھڑا کرنے میں مثبت کردار ادا کرتے ہیں۔

(جاری ہے)

کرنل(ر) ہاشم ڈوگر نے کہا کہ جس رفتار سے دنیا کی آبادی بڑھ رہی ہے،ڈر ہے کہ یہ ایک بم کی شکل اختیار کر لے گی جو کہ کسی طور سے بھی ٹھیک نہیں۔انہوں نے کہا کہ کوئی بھی ملک آبادی میں بے انتہا اضافے کے ساتھ ترقی نہیں کر سکتا۔پاکستان ایک ترقی پذیر ملک ہے اورجس رفتار سے آبادی بڑھ رہی ہے حکومت کیلئے عوام کو تعلیم اور صحت جیسی سہولتیں فراہم کرنا بھی مشکل ہورہا ہے۔

انہوںنے کہا کہ اس وقت پاکستان میں 64 فیصد آبادی نوجوانوںپر مشتمل ہے اور یہ نوجوان ہی ہیں جنہوں نے آبادی کے بڑھتے ہوئے مسئلے کو سمجھ کراسے کنٹرول کرنے میں حکومت کا ساتھ دینا ہے۔انہوں نے حصول تعلیم پر زور دیتے ہوئے کہا کہ تعلیم ہی وہ واحد راستہ ہے جس کے ذریعے سے عوام میں شعور بیدار کیا جا سکتا ہے اور انہیں خاندانی منصوبہ بندی کی اہمیت سے متعلق آگاہ کیا جا سکتا ہے۔

صوبائی وزیر نے تقریب میں موجود طالب علموں کو دعوت دی کہ وہ آگے بڑھیں اور آبادی جیسے مسئلے کو حل کرنے میں حکومت کا ساتھ دیں۔صوبائی وزیر نے بتایا کہ حکومت بہت جلد اسمبلی میں بل لائے گی جس کے تحت بچیوں کی شادی کی عمر16 سے بڑھا کر18سال تک کی جائے گی۔ انہوںنے کہا کہ شادی میں تاخیر کے ذریعے بچوں کی پیدائش میں وقفہ ممکن ہے جو کہ آبادی کو کنٹرول کرنے میں مدد گار ثابت ہو گا۔ایکسپو میں موجود پاکستان بھر کی یونیورسٹیوں سے طلبا کی کثیر تعداد نے شرکت کی۔

لاہور شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments