طلبہ کوابتدائی طبی مدد،سوشل سکیورٹی ،سول ڈیفنس اور سوشل کمیونٹی سروس کی تربیت دینے کے مطالبے کی قرارداد پنجاب اسمبلی میں جمع

تربیت حاصل کرنیوالے طلبہ کی محکموں میں سروس کو بھی لازمی قرار دیا جائے‘تحریک انصاف کی رکن مسرت چیمہ کی قرارداد کا متن

جمعرات اگست 13:24

طلبہ کوابتدائی طبی مدد،سوشل سکیورٹی ،سول ڈیفنس اور سوشل کمیونٹی سروس ..
لاہور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 22 اگست2019ء) پاکستان تحریک انصاف نے موجودہ ملکی حالات اور ملک میں نوجوانوں کی تعداد کو مدنظر رکھتے ہوئے پورے ملک میں کالج اور یونیورسٹیز کے طلبا و طالبات کیلئے ابتدائی طبی مدد،سوشل سکیورٹی،سول ڈیفنس اور سوشل کمیونٹی سروس کی ابتدائی تربیت اور متعلقہ محکموں میں ان کی سروس کو لازمی قرار دینے کی قرارداد پنجاب اسمبلی میںجمع کرادی ۔

قرارداد تحریک انصاف کی رکن اسمبلی مسرت جمشید چیمہ کی جانب سے جمع کرائی گئی ۔

(جاری ہے)

قراردادکے متن میں کہا گیا ہے کہ ابتدائی تربیت طلبا و طالبات کے اندر معاشرے میں ان کے کردار اور مخلوق کی مدد کے جذبہ کو مزید اجاگر کرے گی۔ ابتدائی طور پر یہ تربیت سالانہ بیس سے تیس گھنٹے اور متعلقہ محکموں میں سروس پانچ سے چھ گھنٹے روزانہ ایک ہفتے کیلئے کروائی جائے۔

یا اس کا ایک مربوط نظام مرتب کیا جائے اور اِس کی شروعات آبادی کے لحاظ سے پاکستان کے سب سے بڑے صوبے پنجاب سے کی جائے۔پاکستان کی آبادی میں سب سے بڑی تعداد نوجوانوں کی ہے اور نوجوانوں کی اس تربیت اور سروس سے ملک میں نوجوانوں کی ایک بڑی تعداد کسی بھی صورتحال یا معاشرے کی فلاح و بہبود کیلئے اپنا کردار ادا کرنے کیلئے تیار ہو جائے گی۔

لاہور شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments