کلچر پالیسی سے نا صرف روزگار کے مواقع پیدا ہوں گے بلکہ غربت میں بھی کمی واقعہ ہو گی‘خیال احمد کاستر

نئی ثقافتی بنیاد رکھنے کے ساتھ ساتھ آرٹ اور آرٹسٹوں کے مسائل کو جاننے اور ان کو حل کرنے کی کوشش کر رہے ہیں‘صوبائی وزیر ثقافت

بدھ جنوری 19:04

لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 27 جنوری2021ء) صوبائی وزیر ثقافت خیال احمد کاسترو کی زیرصدارت ہونے والے اجلاس میں سیکرٹری اطلاعات و ثقافت راجہ جہانگیر انور، ڈائریکٹر جنرل پلاک ڈاکٹر صغرا صدف اور ایگزیکٹو ڈائریکٹر لاہور آرٹس کونسل ثمن رائے ،ڈائریکٹر میوزیم اعجاز احمد، چیئرمین باب پاکستان ندیم قریشی اورایگزیکٹو ڈائریکٹر پکار رضوان شریف نے شرکت کی ۔

اجلاس میں سیکرٹری انفارمیشن راجہ جہانگیر انور نے کلچر پالیسی پر تفصیلی بریفنگ دی ۔راجہ جہانگیر انور کا کہنا تھا کہ محکمہ اطلاعات وثقافت نے کلچر پالیسی کا مسودہ تیارکر لیا، جلد منظوری کے لئے پیش کیا جائے گا۔ پنجاب کی تاریخ میں پہلی کلچر پالیسی متعارف ہونا تاریخی عمل ہے ۔ صوبائی وزیر ثقافت خیال احمد کاسترو نے کہاکہ ہماری ثقافت دنیا بھر میں ہماری بہترین سفارت کاری کی بنیاد بن سکتی ہے،اس بدلتے دور میں ثقافت آپکی سب سے وا ضح پہچان اورسب سے بڑی طاقت ہے ۔

(جاری ہے)

نئی ثقافتی بنیاد رکھنے کے ساتھ ساتھ آرٹ اور آرٹسٹوں کے مسائل کو جاننے اور ان کو حل کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔ ثقافت کے تمام شعبوں میں معیار اور ترقی کے لئے معقول اقدامات اٹھائے جارہے ہیں۔ کیا ہماری ثقافت صرف لاہور تک محدود ہے ثقافت اور اس سے وابستہ ہر پہلو کو پورے صوبے میں نچلی سطح تک متعا رف کروائیں گے۔انہوںنے کہاکہ کلچر پالیسی سے نا صرف روزگار کے مواقع پیدا ہوں گے بلکہ غربت میں بھی کمی واقعہ ہو گی۔ ثقافتی پالیسی کلچر کے شعبہ میں انقلابی تبدیلیاں کا باعث بنے گی ۔

لاہور شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments