وزیراعظم کے دورہ سعودی عرب سے دونوں ممالک میں تجارتی، دفاعی و سیاسی تعاون کو فروغ حاصل ہو گا‘کاشف اشفاق

دونوں برادر اسلامی ممالک کے مابین کئی دہائیوں پر محیط انتہائی قریبی تعلقات ،کلیدی جیو اسٹریٹجک شراکت دار ہیں‘سی ای او فرنیچر کونسل

اتوار 24 اکتوبر 2021 13:45

لاہور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 24 اکتوبر2021ء) پاکستان فرنیچر کونسل کے چیف ایگزیکٹو آفیسر میاں کاشف اشفاق نے کہا ہے کہ وزیراعظم عمران خان کے دورہ سعودی عرب سے تجارتی تعلقات مضبوط ہونگے اور دونوں ممالک کے درمیان دفاعی و سیاسی تعاون کو فروغ حاصل ہو گا۔ وسیم ارشد کی قیادت میں فرنیچر مینوفیکچررز کے وفد سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ دونوں برادر اسلامی ممالک کے مابین کئی دہائیوں پر محیط انتہائی قریبی تعلقات ہیں اور دونوں کلیدی جیو اسٹریٹجک شراکت دار ہیں۔

امید ہے کہ آنے والے دنوں میں بھی یہ تعلقات مزید مستحکم ہونگے۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم کے دورہ سے سعودی عرب میں تقریبا 25 لاکھ پاکستانی تارکین وطن کے کام کے مواقع کو بہتر بنانے میں مدد ملے گی جو ملک کے لیے زر مبادلہ کے ذخائر کا بنیادی ذریعہ ہیں۔

(جاری ہے)

انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم کا دورہ ایک اہم اقدام ہے جو پاک سعودی تعلقات کی بحالی اور معمول سے زیادہ مستحکم اور پائیدار تعلقات کے قیام میں مددگار ہو گا۔

انہوں نے کہا کہ ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان سے وزیر اعظم عمران خان کی ملاقات سے فریقین کو مزید پائیدار اور باہمی طور پر فائدہ مند شراکت داری کو فروغ دینے میں مدد ملے گی۔ میاں کاشف نے کہا کہ یہ دورہ پاکستان میں توانائی اور پٹرولیم کے شعبوں میں سعودی سرمایہ کاری کو بھی راغب کرے گا۔ انہوں نے کہا کہ 2020 سعودی عرب کو پاکستان کی برآمدات 432.2 ملین ڈالر جبکہ درآمدات 1.89 بلین ڈالر تھیں۔ دونوں ممالک کے نجی شعبہ کو متحرک کر کے اس تجارتی حجم میں اضافہ کیا جا سکتا ہے۔

لاہور شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments