لاڑکانہ،نشے میں دھت ایس ایچ او نے راہ گیروں پر گاڑی چڑھا دی،

2 افراد جاں بحق،زخمی ایس ایچ او کو گرفتار کرکے قتل اور دیگر دفعات کے تحت مقدمہ درج کرلیا گیا

پیر جنوری 12:30

لاڑکانہ(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 29 جنوری2018ء) سندھ کے شہر لاڑکانہ میں نشے میں دھت ایک ایس ایچ اونے راہ گیروں پر گاڑی چڑھا دی، گاڑی کی ٹکر سے 2 افراد جاں بحق جبکہ 6 زخمی ہوگئے،ایس ایچ او کو گرفتار کرکے قتل اور دیگر دفعات کے تحت مقدمہ درج کرلیا گیا ۔پولیس کے مطابق لاڑکانہ کے تھانہ ولید کے ایس ایچ او علی مرتضی نے نشے کی حالت میں لاہوری ریگولیٹر کے قریب گاڑی راہ گیروں پر چڑھادی۔

(جاری ہے)

گاڑی کی ٹکر سے 2 افراد جاں بحق اور 6 زخمی ہوگئے، زخمی افراد کو چانڈکا میڈیکل کالج اسپتال منتقل کردیا گیا جہاں دو افراد کی حالت تشویشناک بتائی گئی۔ایس ایچ او کو گرفتار کرکے قتل اور دیگر دفعات کے تحت مقدمہ درج کرلیا گیا ہے۔دوسری جانب زخمی افراد کو اسپتال میں بروقت طبی امداد نہ ملنے پر ورثا نے اسپتال میں احتجاج کرتے ہوئے شیشے توڑ دیئے۔تاہم بعد میں اسپتال انتظامیہ کی یقین دہانی پر ورثا نے احتجاج ختم کردیا۔

متعلقہ عنوان :

لاڑکانہ شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments