مردان میں تہرے قتل کے پیچھے 18 سالہ لڑکی نکلی

ملزمہ نے باپ، سوتیلی ماں اور بھائی کو قتل کرنے کا اعتراف کر لیا،تفتیش میں اہم انکشاف

Muqadas Farooq مقدس فاروق اعوان جمعہ جون 18:00

مردان میں تہرے قتل کے پیچھے 18 سالہ لڑکی نکلی
مردان (اردوپوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 04 جون2021ء) مردان میں 18 سالہ لڑکی نے 3 قتل کر دئیے،تفتیش کے دوران انتہائی اہم انکشافات ہو گئے۔تفصیلات کے مطابق مردان میں تہرے قتل کیس میں اہم پیش رفت سامنے آئی ہے،تہرے قتل میں پولیس ملزمہ تک پہنچ گئی۔بتایا گیا ہے کہ مردان میں میاں بیوی کو کمسن بیٹے سمیت قتل کرنے والی مقتول کی بیٹی نکلی۔ملزمہ نے باپ، سوتیلی ماں اور بھائی کو قتل کرنے کا اعتراف کیا ہے۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق ملزمہ کی عمر صرف 18 سال ہے۔ملزمہ کا کہنا ہے کہ باپ سوتیلی ماں کے ساتھ مل کر مجھ پر تشدد کرتا تھا۔ ۔پولیس ملزمہ سے مزید تفتیش بھی کر رہی ہے۔دوسری جانب مردان کے نواحی علاقہ فاطمہ میں سالوں کی فائرنگ سے بہنوئی بیوی اور ایک کمسن بیٹے سمیت قتل ، ملزمان واردات کے بعد فرار ہونے میں کامیاب ہو گئے ۔

(جاری ہے)

بتایا گیا ہے کہ پولیس تھانہ جبر کو الیاس حسین ولد فرید گل ساکن فاطمہ نے اپنی رپورٹ میں بتایا کہ میرے بھائی فرمان گل کی پہلی بیوی (م)تقریباً تین سال پہلے وفات پا چکی تھی ۔

میرے بھاء کے سسرال والوں کو شک تھا کہ اس نے اپنی بیوی کو تشدد کر کے قتل کیا تھا ، جس کا ان کے سسرال والوں کو رنج تھا ۔ منگل کے روز جب میرا بھائی فرمان گل اپنی دوسری بیوی اور تین سالہ کمسن بیٹے کے ہمراہ اپنے گھر میں موجود تھا کہ اسی اثنائ میرے بھائی کے سالے گران اور دولت خان پسران افضل جان ساکنان اوچ دیر نے گھر میں گھس کر اندھا دھند فائیرنگ شروع کر دی جس کے نتیجے میں میرا بھائی فرمان گل اس کی بیوی طاہرہ اور تین سالہ کمسن بیٹا حسنین موقع پر جاں بحق ہو گئے ۔ملزمان واردات کے بعد موقع سے فرار ہونے میں کامیاب ہو گئے ۔ پولیس تھانہ جبر نے رپورٹ درج کر کے تفتیش شروع کر دی ۔

مردان شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments