اُردو پوائنٹ پاکستان میانوالیمیانوالی کی خبریںسی پیک دو حکومتوں نہیں بلکہ دو قوموں کے درمیان بہتر تعلقات کا معاہدہ ..

سی پیک دو حکومتوں نہیں بلکہ دو قوموں کے درمیان بہتر تعلقات کا معاہدہ ہے‘ ڈاکٹر نورالحق قادری

, چین پاکستان کے تعاون سے فاٹا ریجن اور افغان مہاجرین کی سماجی ترقی کا خواہشمند ہے ‘ چینی سفیر یاؤ جِنگ , وزیر مذہبی امور ڈاکٹر نور الحق قادری سے چینی سفیر یاؤ جِنگ کی ملاقات ؛ سماجی ترقی ، مذہبی ہم آہنگی کے فروغ پر تبادلہ خیال

اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 19 ستمبر2018ء) سی پیک دو حکومتوں نہیں بلکہ دو قوموں کے درمیان بہتر تعلقات کا معاہدہ ہے۔ یہ بات وفاقی وزیر مذہبی امور و بین المذاہب ہم آہنگی صاحبزادہ ڈاکٹر نورالحق قادری نے پاکستان میں چین کے سفیر جناب یاؤ جِنگ سے اپنے دفتر میں ملاقات کے دوران کہی۔ تفصیلات کے مطابق آج چینی سفیر نے وفاقی وزیر مذہبی امور صاحبزادہ ڈاکٹر نور الحق قادری سے ان کے دفتر میں سی پیک معاہدہ، فاٹا ریجن میں سماجی ترقی ، افغان مہاجرین اور دونوں ملکوں کے درمیان مذہبی ہم آہنگی میں تعاون اور فروغ پر تفصیلی بات چیت کی۔

وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ وزیر اعظم پاکستان عمران خان نے سی پیک کی تعمیر اور جلد تکمیل پر دو ٹوک موقف اختیار کیا ہے ۔ پاکستان ہر صورت چین کے ساتھ تعلقات کو وسعت دے گا۔

(خبر جاری ہے)

ہمارا موقف ہے جو چین کا دشمن ہے وہ پاکستان کا دشمن ہے۔ سی پیک منصوبے میں فاٹا کے علاقے کو خاص اہمیت دی جائے ۔ فاٹا کے عوام بھی چائنا کی طرف دیکھ رہے ہیں۔ علاقے کی سماجی ترقی کے حوالے سے سب سے پہلے خواتین کی تعلیم، صحت اور صاف پانی کی فراہمی پر مل کر کام کریں گے۔

علاقے میں ترقی اور مؤثر رابطے کیلئے ہر ضلع اور تحصیل کی سطح پر پڑھے لکھے لوگوں کا گروپ مقرر کیا جائے گا۔ فاٹا میں کام سے افغانستان میں امن کیلئے مزید راہ ہموار ہو گی۔ افغانستان کے ساتھ تعلقات میں کافی بہتری آئی ہے۔ بہتر مذہبی ہم آہنگی کیلئے دونوں ملکوں کے درمیان علمائ کرام کا تبادلہ خیال ضروری ہے۔ چینی سفیر یاؤ جِنگ کا کہنا تھا کہ چین میں 2 کروڑ مسلمان بستے ہیں جنہیں مکمل مذہبی آزادی حاصل ہے۔

پاکستان اسلامی دنیا کا اہم ترین ملک ہے۔ ہم پاک چائینہ تعلقات کو اسلامی سطح پر مزید استوار کرنا چاہتے ہیں اور ان تعلقات میں اپنی مسلم کمیونٹی کو ساتھ لے کر چلنا چاہتے ہیں ۔ ہم چین میں مسلمانوں کے تعلیمی نصاب پر ملکر کام کرینگے۔ چین پاکستان کے تعاون سے فاٹا ریجن اور افغان مہاجرین کی سماجی ترقی کا خواہشمند ہے ۔ پاکستان کے ساتھ مل کر افغان مہاجرین کی بہتری کیلئے کام کرینگے ۔ چین پاکستانی عوام خصوصا فاٹا کے علاقوں کی سماجی ترقی کا خواہشمند ہے ۔ چین فاٹا میں 50 سکول کھولنے کا ارادہ رکھتا ہے ۔ فاٹا میں کام کرنے کیلئے وزیر مذہبی امور کے خصوصی تعاون کی ضرورت ہو گی۔

اپنی رائے کا اظہار کریں -

میانوالی شہر کی مزید خبریں