سینکڑوں کی تعداد میں شدید گرمی کے باوجود میرانشاہ پریس کلب کے سامنے مطالبات کے حق میں احتجاجی دھرنا

ہفتہ 29 مئی 2021 17:24

میرانشاہ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 29 مئی2021ء) شمالی وزیرستان کے ہمزونی قبائل نے سینکڑوں کی تعداد میں شدید گرمی کے باوجود میرانشاہ پریس کلب کے سامنے اپنے مطالبات کے حق میں احتجاجی دھرنا دیا ہے جس کی قیادت چیف ا ف داوڑ ملک جان محمد کر رہے تھے ،مظاہرین نے مطالبہ کیا کہ گذشتہ دنوں ہمزونی کی حدود میں سیکورٹی فورسز پر ریموٹ کنٹرول بم حملے کے بعد گرفتاربے گناہ چھ افراد کو فوری طور پر رہا کیا جائے اور جو لوگ اس میں حقیقی معنوں میں ملوث ہے ،ان کے خلاف ایف آئی ار کاٹی جائے اور انہیں گرفتار کیا جائے۔

مظاہرین شدید دھوپ اور گرمی میں پریس کلب کے سامنے دھرنا دیئے ہو ئے ہیں اور ہاتھو ں میں بینرز اور پلے کارڈز بھی اٹھا رکھے ہیں جن پر ان کے مطابات درج ہیں۔

(جاری ہے)

ہمزونی قبائل کی طرف سے میڈیا کو جاری کردہ ایک پریس ریلیز میں دعوی ٰکیا گیا کہ دھماکے کے بعد بم ڈسپوزل والوں نے ایک ہی گھرانے کے تین بے گناہ افراد کو غیر قانونی طورپر حبس بے جا میں رکھا ہوا ہے اور کئی بار اعلی حکام سے مذاکرات کے باوجود انہیں رہا نہیں کیا جا رہا۔

چیف اف داوڑ ملک جان محمد نے میرانشاہ پریس کلب کے سامنے میڈیا کے نمائندوں کو بتایا کہ پہلے ہم نے نو دن ہمزونی میں احتجاجی مظاہرے اور دھرنے دیئے تاہم حکومت ٹس سے مس نہیں ہو رہی اور اب مجبوراً میرانشاہ کا رٴْخ کرنا پڑا ہے جس میں اگر ہمارے مطالبات نہیں مانے گئے تو پشاور اور اسلام اباد تک اپنی احتجاج کا دائرہ بڑھائینگے۔انہوں نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ جب بھی دھماکہ ہوتا ہے ہمارے گھروں کے تقدس کو پامال کیا جاتا ہے اس سلسلے کو بند ہونا چاہئے۔ مظاہرین سے دیگر سیاسی رہنماؤوں نے بھی خطاب کیا۔

میرانشاہ شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments