نارووال ‘سیوریج سسٹم بند ہونے سے مسائل کے انبار لگ گئے عوامی و حکومتی نمائندوں اور سیاسی رہنمائوں نے چپ سادھ لی

اتوار 2 جنوری 2022 15:10

نارووال(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 02 جنوری2022ء) نارووال کے محلہ رسول پورہ میں سیوریج سسٹم بند ہونے سے مسائل کے انبار لگ گئے عوامی و حکومتی نمائندوں اور سیاسی رہنمائوں نے چپ سادھ لی ۔ بتایا گیا ہے کہ نارووال کے محلہ رسول پورہ کا سیوریج سسٹم پچھلے ایک سال سے مکمل طور پر تباہ ہو چکا ہے اور نالیوں کا گندہ پانی گھروں اور گلیوں میں تعفن پھیلا رہا ہے۔

گلیا ںجوہڑ بن چکی ہیں اور عوام اذیت میں مبتلا ہو چکے ہیں ان گلیوں سے گزرنا محال ہو چکا ہے ۔سکول کے کمسن طلبہ و طالبات اورلیڈی ٹیچر ز اسی تعفن زدہ گندے پانی سے گزر کر سکول آنے جانے پر مجبور ہیں فلٹریشن پلانٹ سے صاف پانی کے حصول کے لیے بھی خواتین اور بچوں کو چوبیس گھنٹے اسی غلاظت سے گزرنا پڑتا ہے،علاقہ میں ڈینگی سمیت دیگر موذی امراض پھیلنے کا خدشہ ہے ۔

(جاری ہے)

اہل علاقہ کا کہنا ہے کہ ایک سال سے ہم کئی بار جا کر ضلعی انتظامیہ اور حکومتی سیاسی رہنمائوں کو سیوریج سسٹم کی تباہ حالی کی شکایت کر چکے ہیں لیکن نارووال کو پیرس بنانے کے دعوے کرنے والوں کے کانوں پر جوں تک نہیں رینگتی۔سیوریج کا پانی گھروں کی بنیادوں کو کمزور کر رہا ہے جس سے مکانوں میں دڑاریں پڑ رہی ہیں اور گھر تباہ ہو رہے ہیں مگر کسی کو پرواہ نہیں،واضح رہے کہ چند دن قبل محلہ رسول پورہ میں سیوریج سسٹم کو بحال کرنے کے لیے کام کا آغاز ہوا لیکن دوسرے روز ہی کام بند کر دیا گیا۔

متعلقہ عنوان :

نارووال شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments