ضلع اورکزئی ایجوکیشن دفتر میں سیاسی خود کش حملہ

،ْایم پی اے اور ایم این اے کے سیاسی اختلافات سے 6ماہ سے ڈسٹرکٹ ایجوکیشن افیسر کی عدم تعیناتی سینکڑوں نئے اساتذہ کی تقرری کے آرڈر ہوا میں لٹک گئے ، اساتذہ کی ترقی ،تبادلے و تعیناتیاں بند - ہمارے مطالبات کو نہیں مانا گیاتو زیر اعلی ہاوس پشاور کے سامنے احتجاجی کیمپ لگائیں گے، ینگ ٹیچر ایسوسی ایشن ضلع اورکزئی

منگل ستمبر 22:12

اورکزئی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - آن لائن۔ 08 ستمبر2020ء) ضلع اورکزئی ایجوکیشن دفتر میں سیاسی خود کش حملہ ہوا ہے، ایم پی اے اور ایم این اے کے آپس میں سیاسی اختلافات کی وجہ سے گزشتہ 6ماہ سے ڈسٹرکٹ ایجوکیشن افیسر کے نہ ہونے کے باعث سینکڑوں نئے اساتذہ کی تقرری کے آرڈر ہوا میں لٹک گئے ، اساتذہ کی ترقی ،تبادلے و تعیناتیاں بند ہیں، حکومت اور ضلعی انتظامیہ جلداز جلد ڈسٹرکٹ ایجوکیشن افیسر کے تعیناتی کو یقینی بنائے یا موجودہ ڈی ڈی او کو ڈی ای او کے اختیارات دئیے جائیں کیونکہ گزشتہ ایک سال سے نئے اساتذہ کی ایٹاٹیسٹ پاس ہونے میرٹ لسٹ انے کے باوجود اپوائمنٹ نہیں ہورہا اگر ہمارے ان مطالبات کو نہیں مانا گیاتو ہم وزیر اعلی ہاوس پشاور کے سامنے احتجاجی کیمپ لگائیں گے کیونکہ دیگر قبائلی اضلاع میں بھرتیاں ہوئی ہیں صرف اورکزئی میں سیاسی اختلافات کی وجہ سے بھرتیاں نہیں ہوئی ان خیالات اظہار ینگ ٹیچر ایسوسی ایشن ضلع اورکزئی کے صدر حلیم اورکزئی اور ال ٹیچر ایسوسی ایشن ضلع اورکزئی کے صدر حاجی فیروز خان کی قیادت میں اورکزئی ایجوکیشن دفتر میں منعقدہ احتجاجی مظاہرے سے مقررین نے خطاب کرتے ہوئے کیا انہوںنے کہاکہ ایک سال قبل ضلع اورکزئی میں 94نئے سکولوں کی اپ گریڈیشن کے بعد نئے اساتذہ کے بھرتیوں کیلئے باقاعدہ ایٹا ٹیسٹ ہوا ٹیسٹ میں پاس ہونے والے امیدواروں کا باقاعدہ میرٹ لسٹ شائع ہوا مگر گزشتہ 6ماہ سے ڈسٹرکٹ ایجوکیشن افیسر ضلع اورکزئی بیماری کی وجہ سے چھٹی پر ہے اور اس نے کسی کو قائم مقام کے اختیارات بھی نہیں دئے ہیں اس کے علاوہ ضلع اورکزئی کے ایم پی اے و ایم این اے کے سیاسی اختلافات کی وجہ سے اپوائمنٹ ارڈرز جاری نہیں ہو رہے ہیں اس کے برعکس تمام قبائلی اضلاع میں بھرتیاں ہو چکی ہیں جبکہ ضلع اورکزئی میں نہیں ہو رہی ہیں ہم تمام اساتذہ اس کو محکمہ ایجوکیشن ضلع اورکزئی پر سیاسی خوکش حملہ قرار دیتے ہیں کیونکہ ایم این اے اور ایم پی اے کے اپس میں اختلافات کی وجہ سے محکمہ ایجوکیشن اورکزئی تباہی کے دہانی پر کھڑا ہے انہوںنے کہا کہ ڈی ای او نہ ہونے کی وجہ سے پروموشن ٹرانسفر پوسٹنگ بند ہیں جبکہ نئی خالی کلاس فور ملازمین کے پوسٹوں پر بھی بھرتیاں نہیں ہو رہی ہیں ہمیں ایسے گندے سیاست کا خاتمہ کرنا ہے کہ جس سے ضلع اورکزئی کے عوام کو فائدے اور ترقی کے بجائے پستے کی طرف لے جائے مظاہرین نے کہاکہ موجودہ حکومت کے ارادے محکمہ تعلیم کیلئے ٹھیک نہیں ہے اب یہ پنشن اور سالانہ اینکریمنٹ کے خاتمے پہ درپے ہیں جوکہ ہمیں کسی بھی صورت میں منظور نہیں انہوںنے مطالبہ کیا کہ تمام ملازمین کو بلا تفریق جدید ٹائم سکیل دیاجائے ایڈ ہاک ایزم اور کنٹریکٹ کے پالیسی کو ختم کیاجائے میڈیکل الاونس میں کم از کم ایک ہزار روپے اضافہ کیاجائے ہاوس رینٹ الاونس بلا تفریق 50فیصد دی جائے تنخواہوں میں سو فیصد اضافہ کیاجائے انہوںنے کہاکہ اگر تین دن کے اندر اندر نئے ڈی ای او کو تعینات نہیں کیاگیا یا موجودہ ڈی ڈی او کو اختیارات نہیں دئے گئے اور نئے اساتذہ کی بھرتیوں کے ارڈر کو جاری نہیں کیاگیا تو ہم وزیراعلی ہاوس پشاور کے سامنے احتجاجی کیمپ لگا کر دھرنا دیں گے مظاہرین نے ایجوکیشن افس سے مین جی ٹی روڈ تک احتجاجی ریلی بھی نکالی جس میں منتخب عوامی نمائندوں اور محکمہ تعلیم کے خلاف شدید نعرے بازی کی ۔

اورکزئی ایجنسی شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments