اُردو پوائنٹ پاکستان پشاورپشاور کی خبریںخیبرپختونخواہ پولیس کا کارنامہ; جعلی کرنسی نوٹوں سے مویشی خریدنے والا ..

خیبرپختونخواہ پولیس کا کارنامہ; جعلی کرنسی نوٹوں سے مویشی خریدنے والا شخص گرفتار

ملزم نے ایک کم سن بیوپاری کو جعلی نوٹ دے کر مویشی خریدا تھا

پشاور (اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 17 اگست 2018ء): خیبرپختونخواہ پولیس نے جعلی کرنسی نوٹ دے کر کم سن بیوپاری سے مویشی خریدنے والے شخص کو گرفتار کر لیا۔ تفصیلات کے مطابق خیبرپختونخواہ پولیس نے جعلی کرنسی نوٹ دے کر مویشی خریدنے والے شخص کو گرفتار کر کے ملزم کی تصویر جاری کر دی۔ پولیس نے ملزم سمیت اس کے تمام گروہ کو گرفتار کر لیا ہے جو اسی طرح جعلی کرنسی نوٹ دے کر مویشی خریدنے کا کام کرتے تھے۔

پشاور پولیس نے اس شخص کو کم سن بیوپاری کی ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہونے کےبعد گرفتار کیا ۔ اس ویڈیو میں کم سن بیوپاری نے جعلی کرنسی نوٹوں کے عوض مویشی خریدنے والے ملزمان سے متعلق آگاہ گیا جس پر پولیس چوکنا ہو گئی اور ملزم کی تلاش کا آغاز کر دیا۔ گرفتاری کے بعد علم ہوا کہ یہ ملزم اکیلا نہیں بلکہ اس کا ایک منظم گروہ ہے جس میں شامل افراد ایسے ہی مختلف مویشی منڈیوں میں جا کر جعلی کرنسی نوٹوں کے عوض مویشی خریدتے ہیں۔

(خبر جاری ہے)

سوشل میڈیا پر کم سن بیوپاری کی ویڈیو وائرل ہوئی جس میں کم سن بیوپاری نے پولیس سے درخواست کی کہ اس پر سخت کارروائی کی جائے۔ یہ ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہوئی تو صارفین نے بھی اس بچے کا نقصان ہونے پر افسوس کا اظہار کیا اور ایسا کرنے والوں کو خوب کوسا۔جس کے بعد یہ خبر سامنے آئی کہ ایک یونیورسٹی کے طلبا نے اس بچے کو ڈھونڈ کر نہ صرف اس کی مالی مدد کی بلکہ اسے عید کے تحائف بھی دئے جس پر وہ بے حد خوش ہو گیا اور اس نے مدد کرنے والوں کا بھی شکریہ ادا کیا۔
اس بچے کو 50 ہزار روپے ، عید کے لیے نئے جوتے اور کپڑے دئے گئے۔ اقرا یونیورسٹی کے وائس چانسلر اورکچھ طلبا نے اس بچے کے لیے رقم جمع کی ، جس کے بعد ان کے اس اقدام کو بھی سوشل میڈیا پر کافی سراہا گیا۔

اپنی رائے کا اظہار کریں -

پشاور شہر کی مزید خبریں