ایس پی طاہر داوڑ کی میت خیبرمیڈیکل کالج منتقل

طاہر داوڑ کی لاش کا پوسٹ مارٹم کیا جار ہا ہے ، پولیس

Syed Fakhir Abbas سید فاخر عباس جمعرات نومبر 19:15

ایس پی طاہر داوڑ کی میت خیبرمیڈیکل کالج منتقل
پشاور(اردوپوائنٹ تازہ ترین اخبار-15 نومبر 2018ء ) : ایس پی طاہر داوڑ کی میت پاکستان پہنچنے پر خیبرمیڈیکل کالج منتقل کر دی گئی جہاں انکا پوسٹ مارٹم کیا جارہا ہے۔تفصیلات کے مطابق ایس ایس پی طاہر خان دراوڑ کا تعلق خیبر پختونخواہ پولیس سے تھا۔کچھ روز قبل وہ اسلام آباد دورے پر تھے کہ ان کے لاپتہ ہونے کی اطلاعات آئی تھیں۔پولیس کی جانب سے بہت کوشش کے باوجود بھی وہ اسلام آباد سے برآمد نہ ہوئے ۔

پولیس نے تحقیقات کا دائرہ پھیلاتے ہوئے اس کیس کے تمام پہلووں کو مدنظر رکھتے ہوئے تفتیش کی ۔تاہم پولیس انکا سراغ لگانے میں ناکام رہی۔13 نومبر کو سامنے آنے والی خبر کے مطابق ایس ایس پی رورل طاہر خان خٹک کو قتل کر دیا گیا ۔ ایس ایس پی طاہر خان درواڑ کو افغانستان میں قتل کیا گیا۔

(جاری ہے)

انکو اغوا کر کے کچھ دن پنجاب میں رکھا گیا اور پھر میانوالی لے کر جایا گیا۔

پھر ایس ایس پی طاہر خان دراوڑر کو بنوں کے راستے افغانستان لے جایا گیا تھا جہاں انکو صوبے ننگرہار میں قتل کیا گیا۔اس خبر کی تصدیق ہوتے ہی پاکستانی حکام کی جانب سے افغان حکام کے ساتھ رابطہ کیا اور 2 روز کی تگ و دو کے بعد ایس ایس پی طاہر خان دراوڑ کی لاش پاکستانی حکام نے حاصل کر لی ہے۔وزیر مملکت برائے داخلہ شہریار خان آفریدی نے خود پاک افغان سرحد پر ایس ایس پی طاہر خان کی لاش وصول کی جبکہ اس موقع پر افغان حکام نے ان کو بھی اڑھائی گھنٹے تک بارڈر پر کھڑا رکھا۔

تاہم پاکستان پہنچنے کے بعد ایس پی طاہر داوڑ کی میت خیبرمیڈیکل کالج منتقل کر دی گئی۔اس موقع پر طاہر خان دراوڑ کا پوسٹ مارٹم کیا جارہا ہے۔لاش کو نماز جنازہ کے بعد لواحقین کے سپرد کر دیا جائے گا جبکہ انکی تدفین آبائی علاقے میں کی جائے گی۔            

پشاور شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments