ہسپتالوں میں جدید ٹیکنالوجی مہیا کرنے کے لئے دن رات کوشاں ہیں ،ہشام انعام اللہ وزیر صحت خیبرپختونخوا

جمعہ ستمبر 23:30

پشاور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 20 ستمبر2019ء) وزیر صحت ڈاکٹر ہشام انعام اللہ خان نے کہا ہے کہ صوبہ کی ہسپتالوں میں جدید ٹیکنالوجی مہیا کرنے کے لئے دن رات کوشاں ہیں اور اس عمل کو عملی جامہ پہنانے کے لیے صوبے کے تمام ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹرز ہسپتالوں کی تمام ایکسرے مشینوں ، ایم آر آئی، بلڈ لیبارٹریز ، سی ٹی سکین مشین کے علاوہ دیگر مشینری کو ہیلتھ فاؤنڈیشن کے توسط سے پبلک پرائیویٹ پارٹنرشپ کے ذریعے جدید بنایا جائے گا۔

ان خیالات کا اظہارانہوں نے ہیلتھ فاؤنڈیشن کے وفد کے ساتھ ملاقت میںکیا، اجلاس کی صدارت وزیر صحت نے کی ،اس موقع پر سپیشل سیکریٹری ڈاکٹر سید فاروق جمیل، ایڈوائزر ٹو منسٹر ہیلتھ ڈاکٹر جواد آصف، نیازمحمد، ڈپٹی سیکرٹری طفیل خان ، ایڈیشنل سیکریٹری احمد زیب، ایم ڈی ہیلتھ فاؤنڈیشن ڈاکٹر جانباز خان ، ڈپٹی ڈائریکٹر محمد عرفان خان کے علاوہ محکمہ صحت کے دیگر اعلیٰ افسران نے شرکت کی۔

(جاری ہے)

اجلاس سے وزیر صحت نے یہ بھی کہا کہ حکومت کی جانب سے لکی مروت ، کرک، ہریپور، وزیرستان ، کرم اور باجوڑ میں موجود پانچ سو بستروں کے ہسپتالوں کو بہتر بنایا جائے گا اور ہیلتھ فاؤنڈیشن کی بدولت پبلک پرائیویٹ پارٹنرشپ سے ہر ہسپتال کے ساتھ ایک میڈیکل ٹیچنگ کالج بنایا جائے گا۔وزیر صحت اس موقع پر ایک کمیٹی بھی بنائی اور کمیٹی کو ہدایات جاری کی گئی کہ دس روز کے اندر ایک حکمت عملی مرتب کرکے جمع کرائی جائے۔

وزیر صحت نے اس موقع پر کہا کہ چھ نئے میڈیکل ٹیچنگ کالجز کے قیام سے صوبے کے طالبعلموں کو بہترین مواقع میسر ہوں گے اور اس کے ساتھ ساتھ ہسپتالوں کے مختلف شعبوں میں بہتری نظر آئے گی۔ انہوں نے کہا کہ یہ میڈیکل کالجز پبلک پرائیویٹ پارٹنرشپ کے تحت بنائے جائیں گے اور یہ صوبے کے طالب علموں کے لئے حکومت کی طرف سے ایک تحفہ ہوگا۔

متعلقہ عنوان :

پشاور شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments