پشاور،ملاکنڈتھانہ میںعوام کے مسائل کوحل کرنے کیلئے کھلی کچہری کا انعقاد

جمعہ ستمبر 23:31

پشاور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 20 ستمبر2019ء) عوامی مسائل کی سنے اور اس کو ممکنہ طور پر بروقت حل کرنے کی غرض سے جمعہ کے روز ضلع ملاکنڈ کے علاقے تھانہ میں گنیار کے مقام پر ڈپٹی کمشنر و کمانڈنٹ ملاکنڈ لیویز اقبال حسین کی زیر نگرانی کھلی کچہری کا انعقاد کیا گیا جس میں اسسٹنٹ کمشنر بٹ خیلہ سہیل خان کے علاوہ محکمہ زراعت، تعلیم و دیگر تمام محکمہ جات کے افسران،اس ڈی او واپڈا اور گنیار کے گرد نواح سے آئے ہوئے عوام نے کثیر تعداد میں شرکت کی۔

کھلی کچہری میں بانڈہ جات نلو اور گنیارکے سابقہ نائب چیئرمین پر ہیز گار باچہ نے علاقے کے عوام کو درپیش دیرینہ مسائل سے ڈپٹی کمشنر کو آگاہ کیا۔ڈپٹی کمشنر نے بعض مسائل کو موقع پر حل کرنے کے لیے متعلقہ حکام کو ہدایات صادر کیں۔

(جاری ہے)

ڈپٹی کمشنر نے کھلی کچہری سے خطاب کرتے ہوئے لوگوں کو یقین دلایا کہ انکے تمام مسائل و مشکلا ت کا ازالہ کرنے کے لیے حکام بالاسے رابطہ کیا جائے گا۔

انہوں نے کہاکہ علاقہ میں آئس نشہ کی مکمل روک تھام اور اس قبیح کاروبار میں ملوث عناصر کو قانون کی پکڑ میں لانے کیلئے انتظامیہ پوری طور پر مستعد ہے اور ضلع کے کسی بھی علاقے میں ا س ناسورمیں ملوث عناصر کے ساتھ کوئی بھی رعایت نہیں کی جاسکتی۔انھوں نے کہا کہ عوام بھی اس سلسلے میں انتظامیہ کے ساتھ تعاون کرے اور جہاں جہاں پر اس دھندے میں ملوث افراد کا انھیں پتہ چلے تو انتظامیہ کو مطلع کرے تاکہ انکے خلاف سخت ایکشن لیا جاسکے۔

انہوں نے اس مو قع پر واپڈا حکام کو ہدایت کی کہ وہ گنیار میں بجلی کی غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ کا سلسلہ مستقل بنیادوں پر حل کرنے کے لیے اقدامات اٹھائے جبکہ محکمہ آبنوشی کو علاقے میں پینے کے صاف پانی کی فراہمی کو یقینی بنانے کیلئے بھی احکامات جاری کیے گئے۔انہوں نے عوامی مطالبات کے پیش نظر گنیار میں گرلز مڈل سکول کو ہائی کا درجہ دینے کے سلسلے میں محکمہ تعلیم کے متعلقہ حکام سے رابطہ کرنے کی بھی یقین دہانی کرادی۔

بعد ازاں ڈپٹی کمشنر نے افسران کے ہمراہ گنیار میں تعلیمی اداروں اور بنیادی مرکز صحت کا بھی معائنہ کیا۔انہوں نے علاقے میں قائم زنانہ و مردانہ مڈلز سکولوں کو وقت سے پہلے چھٹی کرنے پر سخت برہمی کا اظہار کیا جبکہ بنیادی مرکز صحت میں دوران ڈیوٹی اہلکاروں سے مذکورہ ہیلتھ یونٹ میں دستیاب ادویات اور دیگر سہولیات کے بارے میں دریافت کیا۔اس موقع پر انھوں نے کہا کہ یونٹ میں مریضوں کے لیے ادویات اور سہولیات کی فراہمی کیلئے متعلقہ حکام سے بات کی جائے گی۔

پشاور شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments