محکمہ تعلیم میں کرپٹ عناصرکیلئے کوئی جگہ نہیں،وزیرتعلیم شہرام ترکئی

منگل جون 00:10

پشاور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - آن لائن۔ 21 جون2021ء) صوبائی وزیرتعلیم شہرام ترکئی نے کہاہے کہ ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ میں کرپٹ بندے کیلئے کوئی جگہ نہیں بدعنوانی کے مرتکب افسران کیخلاف ٹھوس شواہد دئیے جائیں قانون کے مطابق سخت سے سخت کارروائی کی جائے گی تین ارب کے ٹینڈرہوچکے ہیں11سی12لاکھ بچوں کیلئے آئندہ چارماہ میں صوبے کے سکولوں میں فرنیچرفراہم کیاجائے گا 95فیصدبچے انشاء اللہ کرسی پربیٹھے گا۔

اسمبلی اجلاس میں اظہارخیال کرتے ہوئے کہاکہ صوبے کے بچے سب ہمارے بچے ہیں کسی بھی حلقے کیساتھ امتیازی سلوک نہیں کیاجائے گا پرائمری سکولوں میں دوہزارکے قریب اے سی سپیشل کمرے بنائے جارہے ہیں پہلی بار صوبے میں بستوں کیلئے وزن کاتعین کیا سمارٹ سکولزکے کانسپٹ اورٹیکنالوجی کی جانب ہم بڑھ رہے ہیں تین ہزارسکول لیڈرزلارہے ہیں جوسکولوں کاجائزہ اورمانیٹرنگ کرینگے ہرسکول میں ٹیبلٹ ہوگا جسکے ذریعے بروقت انفارمیشن آئے گی ارلی چائلڈہوڈپروگرام کوامسال آئی ٹی سے اٹھاکر ایجوکیشن سسٹم میں لارہے ہیں امسال مزیدپچیس ہزارٹیچرزبھرتی کریں گے ضم اضلاع میں چارہزاراساتذہ کی تعیناتی کے آرڈرجلدہوجائیں گے ان اقدامات سے سرکاری سکولوں کامعیاربلندہوگا۔

(جاری ہے)

وزیرسماجی بہبودہشام انعام اللہ نے کہاکہ ترقیاتی سکیمیں قابلیت اورجدوجہدکی بنیاد پرملتی ہیں سابقہ ادوارمیں اپوزیشن اپنے حلقوں میں بھی عوامی فلاحی منصوبے شروع نہ کرسکی اس دورحکومت میں میرے حلقے میں21سکولزاپگریڈیشن کیلئے ملے بجٹ سیاستدان بناتے ہیں بیوروکریٹس اس کوعملی جامہ دیتے ہیںمرجڈاضلاع کے عوام یکساں حقوق کے حقدار ہیں ذاتی مفادکیلئے پختونوں کو گروپوں میں تقسیم کیاجارہاہے قبائلی اضلاع میں ہرسیکٹرمیں کام ہورہاہے سوشل ویلفیئرڈیپارٹمنٹ کے تین سو پراجیکٹ ملازمین کی مستقلی کیلئے ریسوریس کو دیکھناہوگاتاہم مستقلی کیلئے ڈیمانڈبھیجی ہی

متعلقہ عنوان :

پشاور شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments