اُردو پوائنٹ پاکستان کوئٹہکوئٹہ کی خبریںبلوچستان کی پسماندگی اور غربت کو مد نظر رکھتے ہوئے بولان میل اور اکبر ..

بلوچستان کی پسماندگی اور غربت کو مد نظر رکھتے ہوئے بولان میل اور اکبر بگٹی

ایکسپریس کے کرایوں میں30 فیصد کمی کر دی گئی،شیخ رشید احمد , , دونوں ٹرینوں میں بزنس کوچ کو بھی جلد چلائے جائینگے کوئٹہ ژوب ریلوے ٹریک پر جلد کام شروع کیا جائیگا , سبی، ہرنائی ریلوے ٹریک پر سیکورٹی کا مسئلہ ہے ایف سی ، لیویز اور ریلوے پولیس پر مشتمل فورس تشکیل دیں گے اور آئندہ چندماہ میں سبی ہرنائی ریلوے سیکشن بھی بحال کر دیا جائیگا , کوئٹہ ریلوے اسٹیشن میں عوام کو انٹرنیٹ کی سہولت دینے کے لئے بدھ سے وائے فائی کام شروع کرے گا ، میڈیا سے بات چیت

کوئٹہ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 22 اکتوبر2018ء)وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید احمد نے کہا ہے کہ بلوچستان کی پسماندگی اور غربت کو مد نظر رکھتے ہوئے بولان میل اور اکبر بگٹی ایکسپریس کے کرایوں میں30 فیصد کمی کر دی گئی اور دونوں ٹرینوں میں بزنس کوچ کو بھی جلد چلائے جائینگے کوئٹہ ژوب ریلوے ٹریک پر جلد کام شروع کیا جائیگا سبی، ہرنائی ریلوے ٹریک پر سیکورٹی کا مسئلہ ہے ایف سی ، لیویز اور ریلوے پولیس پر مشتمل فورس تشکیل دیں گے اور آئندہ چندماہ میں سبی ہرنائی ریلوے سیکشن بھی بحال کر دیا جائیگا کوئٹہ ریلوے اسٹیشن میں عوام کو انٹرنیٹ کی سہولت دینے کے لئے بدھ سے وائے فائی کام شروع کرے گا ان خیالات کا اظہار انہوں نے ریلوے اسٹیشن کے دورے کے موقع پر میڈیا سے بات چیت کر تے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ بلوچستان کے غریب عوام کو سہولیات دینے کے لئے بولان میل کا کرایہ700 اور اکبر بگٹی کا کرایہ900 روپے کر دیا گیا اور یہ فیصلہ یہاں کے غریب عوام کے مفاد میں کیا گیا ہے بولان میل اور اکبر بگٹی ایکسپریس کو بزنس کوچ اور اے سی سٹینڈرڈ بھی لگایا جائیگا اور ایک سال کے اندر اندر ریلوے نظام کو ٹھیک کر کے ملک کی معیشت میں بھر پور کردا رادا کرینگے ریلوے ٹریک کو کرایہ پر دینے کے لئے تیار ہے سرمایہ کار اپنے کوچ کو ریلوے ٹریک پر چلانے کے لئے ہر قسم کا تعاون کرینگے ریل کے بغیر ملکی معیشت بہتر نہیں ہو گی کوئٹہ اور گوادر ملک کی ترقی میں اہم کردا رادا کر سکتی ہے گوادر دنیا کا 13 واں بند ر گاہ ہے کوئٹہ تفتان ریلوے ٹریک پر بھی بہتری کے لئے اقدامات اٹھائے جائینگے سبی، ہرنائی ریلوے سیکشن پر سیکورٹی کا مسئلہ ہے وزیراعلیٰ بلوچستان کے ساتھ ملا قات کر کے ایف سی ، لیویز اور ریلوے پولیس پر مشتمل فورس تشکیل دینگے ڈھائی ارب روپے کی لاگت سے ریلوے ٹریک تیار کیا گیا ہے 3 ، چار ماہ میں سبی، ہرنائی سیکشن کو بحال کرینگے انہوں نے کہا کہ بلوچستان میں جہاں جہاں لوگ ہونگے وہاں سے ٹرین چلائینگے کوئٹہ ژوب ریلوے ٹریک پر بھی فیزبیلٹی رپورٹ تیارہے اور اس ٹریک پر بھی جلد کام شروع کیا جائیگا ایک سال کے اندر ریلوے نظام کو بہتر کرینگے اور نئے انجن منگوا کر ٹرینوں کو جدید طرز پر چلائیں گے انہوں نے کہا ہے کہ ماضی میں کو تاہیاں ہوئی ہے اور ان کو تا ہیوں کو ختم کرنے کے لئے کچھ وقت درکار ہے 500 پولیس ریلوے میں بھرتی کریں گے اور تنخواہیں پنجاب کے برابر ہو گی ایک سال کے جواب میں انہوں نے کہا ہے کہ ریلوے کی زمین کو پرائیویٹائز کر کے لو گوں کو دعوت دینگے کہ وہ آکر پلازیں بنائیں ٹاسک فور س کا مقصد فریٹ کو بہتر کرنا ہے فریٹ کو بڑھانے کے لئے اقدامات کئے جائینگے اور فریٹ کو بڑھا کر ریلوے کے خسارے کو جلد از جلد ختم کیا جائیگا۔



اپنی رائے کا اظہار کریں -

کوئٹہ شہر کی مزید خبریں