اُردو پوائنٹ پاکستان کوئٹہکوئٹہ کی خبریںقومی قیادت اوررہنماوں کویہ سمجھناچاہئے کہ غیراخلاقی زبان کے استعمال ..

قومی قیادت اوررہنماوں کویہ سمجھناچاہئے کہ غیراخلاقی زبان کے استعمال سے سماج ٹوٹ پھوٹ جائیگا،آج جمہوریت اورانتخابات کے حوالے سے بہت خطرات ہیں،سیکرٹری جنرل جماعت اسلامی لیاقت بلوچ

کوئٹہ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 22 جنوری2018ء)سیکرٹری جنرل جماعت اسلامی لیاقت بلوچ نے کہاہے کہ قومی قیادت اوررہنماوں کویہ سمجھناچاہئے کہ غیراخلاقی زبان کے استعمال سے سماج ٹوٹ پھوٹ جائیگا،آج جمہوریت اورانتخابات کے حوالے سے بہت خطرات ہیں،ملک میں جمہوریت کو چلناچاہئے، یہ بات انہوں نے کوئٹہ میں جمعیت طلبہ عربیہ کے زیراہتمام تحفظ مدارس اور سالمیت پاکستان کے موضوع پر کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہی ۔

(خبر جاری ہے)

سیکرٹری جنرل جماعت اسلامی لیاقت بلوچ نے کہا کہ مدارس پاکستان کے تحفظ کے مورچے ہیں، مگر حکمرانوں نے مدارس کو نظر انداز کیا، ملک میں مدارس کیخلاف منفی پراپیگنڈا کیا گیا ،وقت نے ثابت کیاکہ مغرب دہشت گردی کا مرکز ہے،القاعدہ،داعش اورٹی ٹی پی کے پس پشت مغربی ممالک ہیں،لیاقت بلوچ نے کہا کہ آج قوم کامسئلہ تہذیب اوراخلاقیات ہے،قصوراورمردان میں قوم کی بیٹیوں کی عزت لوٹ کرقتل کیاگیا،کراچی میں راو انوار دہشت گرد بناپھررہاہے،راو انوار جیسے لوگ خاندانوں کو برباد کررہے ہیں،لیاقت بلوچ نے مزید کہا کہ دینی جماعتوں کو مسلم لیگ،پی ٹی آئی اور پی پی پی کے پیچھے لگ کروہ عزت نہیں ملی جوملنی چاہئے تھی،متحدہ مجلس عمل کی صورت میں دینی جماعتوں میں اتحاداوراتفاق ہوگیاہے،متحدہ مجلس عمل فروری کے وسط سے قوم کومتحرک کرنے میں کردارادا کریگی۔



اپنی رائے کا اظہار کریں -

کوئٹہ شہر کی مزید خبریں