جمعیت علماء اسلام نظریاتی پاکستان کی ادویات کی قیمتوں میں15فیصد اضافے کی مذمت

ہفتہ جنوری 23:26

کوئٹہ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 12 جنوری2019ء) جمعیت علماء اسلام نظریاتی پاکستان کے مرکزی نائب و بلوچستان کے امیر مولانا عبدالقادر لونی مرکزی سیکرٹری اطلاعات حاجی عبدالستار شاہ چشتی مرکزی سیکرتری مالیات مولانا عبداستار آزاد صوبائی جنرل سیکرٹری عبداللہ حقانی ملک امان اللہ کاکر ھاجی حیات اللہ کاکڑ نے ڈرگ ریگولٹری اتھارٹی آف پاکستان ڈریپ کی جانب سے ادویات کی قیمتوں میں15فیصد اضافے کی پرزور مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ موجودہ حکومت نے غیرب عوام کو ریلیف دینے کی بجائے غریب عوام کو پریشانیوں عذاب میں مبتلا کر دیا ہے اور دوائوں میں اضافے کا بوجھ صرف غریب عوام پر پڑ رہا ہے سرمایہ دار جاگیر اور طبقات تو زکام کے علاج بھی ملک سے باہر بیرونی ممالک میں کراتے ہیں اپنے خاندانوں کی کفالت کر رہے ہیں اور وہ اس دور میں بے روزگاری ہی کے علاوہ وہ اپنے اور اپنے بال بچوں کے علاج کو سرکاری سطح پر علاج کراتے ہیں لیکن سرکاری سطح پر بھی غریب محکوم عوام کیلئے خاطر خواہ علاج کی سہولیات میسر نہیں ہے نجی ہسپتالوں کو قصاب خانے نہیں ہوتے غریب عوام کو دونوں ہاتھوں سے لوٹ مار جاری ہے۔

کوئٹہ شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments