کو ئٹہ سمیت بلوچستان بھر میں یوم عاشور مذہبی عقیدت و احترام سے منایا گیا

صوبے بھر میں جلوسوں اور مجالس کی سکیورٹی کے فول پروف انتظامات کی وجہ سے کوئی ناخوشگوار واقعہ پیش نہیں آیا، کوئٹہ سمیت صوبے کے 12 اضلاع میں موبائل فون سروس صبح چھ بجے سے رات12بجے تک ملتوی رہی

بدھ ستمبر 16:20

کوئٹہ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 11 ستمبر2019ء) کو ئٹہ سمیت بلوچستان بھر میں یوم عاشور مذہبی عقیدت و احترام سے منایا گیا صوبے بھر میں جلوسوں اور مجالس کی سکیورٹی کے فول پروف انتظامات کی وجہ سے کوئی ناخوشگوار واقعہ پیش نہیں آیا، کوئٹہ سمیت صوبے کے 12 اضلاع میں موبائل فون سروس صبح چھ بجے سے رات12بجے تک ملتوی رہی، تفصیلات کے مطابق کوئٹہ سمیت بلوچستان بھر میںعاشورہ محرم مذہبی عقیدت واحترام سے منایا گیااس سلسلے صوبے کا سب بڑا جلوس کوئٹہ سے برآمد ہوا، کوئٹہ میں 23 ماتمی دستوں پر مشتمل یوم عاشور کا مرکزی جلوس بلوچستان شیعہ کانفرنس کے صدر ناظم اعلیٰ سید دائود آغا کی قیادت میں صبح نو بجے مومن آباد امام بارگاہ عملدار روڈ رحمت اللہ چوک سے برآمد ہوا جو مشن روڈ سے ہوتا ہوا دوپہر کو شہر کے وسطی علاقے میزان چوک پہنچا جہاں پر بلوچستان شیعہ کانفرنس کے صدر ناظم اعلیٰ سید دائود آغا ،ْ علامہ باقر علی حیدری ،ْ علامہ یوسف عابدی جبکہ امام بارگاہ کلاں میں علامہ عزادار حسین بنگش ،ْ علامہ سید رح اللہ رضوی ،ْ علامہ محمد کاظم ،ْ علامہ غلام علی عارفی ،ْ علامہ سید ہاشم موسوی ،ْ علامہ جمعہ اسدی ،ْ اور علامہ ڈاکٹر امجد علی جعفری نے اردو ،ْ پشتو اور فارسی میں واقعہ کربلا اور فلسفہ شہادت پر روشنی ڈالی،حضرت امام حسین رضی اللہ تعالی عنہ اور ان کے ساتھیوں کی لازوال قربانی کی یاد تازہ کی اور نماز ظہرین ادا کی گئی ۔

(جاری ہے)

عاشورہ کے جلوس کی حفاظت کے لیے کوئٹہ شہر میں ایف سی ، پولیس ،ْ اے ٹی ایف ،ْ آر آر جی اور بی سی کے سات ہزار افسران و اہلکار تعینات تھے جبکہ پہاڑوں پر لیویزاور ایف سی کے ڈھائی ہزار اہلکار تعینات کئے گئے تھے، جلوس کی 63 سی سی ٹی وی کیمروں کے علاوہ ہیلی کاپٹر کے ذریعے فضائی نگرانی بھی جاری رہی جبکہ کسی بھی ناخوشگوار واقعہ سے نمٹنے کے لئے پاک فوج کے دستوں کو بھی اسٹینڈ بائی رکھا گیا تھا جلوس کے 47داخلی راستوںمیں آنے والی دکانوں اور مارکیٹوں ،ْ عمارتوں کو مکمل اسکریننگ کے بعدآٹھ محرم الحرام کو ہی سیل کردیا گیا تھا جبکہ وزیر ادخلہ ، آئی جی ایف سی ،ْ،،ْآئی جی پولیس اور دیگر افسران جلوس کی کنٹرول روم اور روٹ پر مانٹرننگ کر تے رہے ،یوم عاشور کے موقع پر کوئٹہ شہر میں موبائل سروس بند اور موٹرسائیکل کی ڈبل سواری پر پابندی عائد رہی جلوس اپنے مقررہ اور روایتی راستوں عملدار روڈ قائد آباد اسٹریٹ ،ْ طوغی روڈ ،ْ مشن روڈ ،ْ باچا خان چوک ،ْ لیاقت بازار ،ْ پرنس روڈ ،ْ میکانگی روڈ ،ْابراہیم اسٹریٹ سے ہوتا ہوا علمدار روڈ مومن آبادمام بارگاہ پر شام کو اختتام پذیرہوا جس کے بعد شہر کی مختلف امام بار گاہوں میں شام غربیاں برپا کی گئی دوسری جانب بلوچستان کے دیگر شہروں سبی ، خضدار ،ڈھاڈر ، حب سمیت اندورن بلوچستان سے بھی یوم عاشور کے جلوس برآمد ہوئے جو اپنے مقررہ راستوں سے ہوتے ہوئے پر امن طور پر اختتام پذیر ہوئے یوم عاشور پر صوبے بھر میں دہشتگردی سمیت کسی بھی قسم کا کوئی ناخوشگوار واقعہ پیش نہیں آیا

کوئٹہ شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments