گندے پانی سے اگائی جانے والی سبزیاں مضر صحت ہیں،ڈائریکٹر جنرل تحفظ ماحولیات جہانگیرکاکڑ

بدھ نومبر 23:23

کوئٹہ(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 25 نومبر2020ء) ڈائریکٹر جنرل محکمہ تحفظ ماحولیات جہانگیر کاکڑ نے ڈائریکٹر ٹیکنیکل تحفظ ماحولیات محمد خان اوتمانخیل اور ڈپٹی ڈائریکٹر ٹیکنیکل عین الدین آ غا کے ہمراہ کوئٹہ شہر کے نالوں سیوریج ان لیٹ آ وٹ لیٹ کا دورہ کیا۔ دورے میںسٹی نالہ،میزان،پولیس لائن،اسپنی روڈ نالہ،مری آ بادنالہ اور نوحصار میں ڈسٹری بیوٹس کے سیمپلینگ کے لیے نشاندہی کی۔

ڈائریکٹر جنرل محکمہ تحفظ ماحولیات نے اپنی ٹیم کے ہمراہ شہر میں آلودہ پانی سے کاشت کی جانے والی سبزیوں فصلوں کے مختلف مقامات کا بھی دورہ کیا، انھوں نے ہدایت جاری کی کہ مستقبل میں مضر صحت سبزیوں کی کاشت کی روک تھام کے حوالے باقاعدہ پلان مرتب کیا جائے کیونکہ ان سبزیوں کو جو گندہ پانی فراہم کیا جا رہا ہے ان میں بھاری دھاتیں شامل ہوتی ہیں اس پانی سے کاشت کی جانے والی پتہ دار سبزیاں استعمال کرنا مضر صحت ہے۔

(جاری ہے)

ان اگائی جانے والی مضرصحت سبزیوں کو فوری تلف کرنے کی ضرورت ہے اس وقت شہر میں ہزاروں ایکڑ پر یہ مضر صحت سبزیاں کاشت کی جا رہی ہیں۔ انھوں نے کہا کہ صاف ستھرا اور صحت افزا ماحول کی فراہمی سب کی مشترکہ زمہ داری ہے۔ پولیتھین بیگس کا استعمال نالوں کی صفائی میں سب سے بڑی رکاوٹ ہے، ماحولیاتی تحفظ کو یقینی بنانے کے لیے تمام تر وسائل بروئے کار لائے جا رہے ہیں اور اس امر میں کسی بھی قسم کی لاپرواہی برداشت نہیں کی جائے گی جس میں عوام کی صحت کا رکھنا حکومت کی زمہ داری ہوگئی

متعلقہ عنوان :

کوئٹہ شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments