بدترین مہنگائی ،حکمرانوں کی لوٹ مار ،آئی ایم ایف کی غلامی کے خلاف آج سے مظاہرے ،ریلیوں کا آغاز کرینگے ،مولاناعبدالحق ہاشمی

ملک بھر کی طرح بلوچستان بھر میں مہنگائی بے روزگاری سودی نظام کے خلاف ہفتہ احتجاج منایا جائیگا ،امیر جماعت اسلامی بلوچستان

ہفتہ 16 اکتوبر 2021 21:48

کوئٹہ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 16 اکتوبر2021ء) امیر جماعت اسلامی بلوچستان مولاناعبدالحق ہاشمی نے کہاکہ بدترین مہنگائی ،حکمرانوں کی لوٹ مار ،آئی ایم ایف کی غلامی کے خلاف آج سے مظاہرے ،ریلیوں کا آغاز کریگی ملک بھر کی طرح بلوچستان بھر میں مہنگائی بے روزگاری سودی نظام کے خلاف ہفتہ احتجاج منایا جائیگا اضلاع وپبلک مقامات پر احتجاج ریکارڈ کیاجائیگا بدقسمتی سے حکمرانوں کو عوام کی کوئی فکرنہیں آئی ایم ایف کی غلامی قبول کرکے حکمرانوں نے ذاتی مفادات کو ترجیح دیکر عوام کو زندہ درگورکرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔

عوام حکمرانوں کی لوٹ مار ،سابقہ وموجودہ حکومت کی مجرمانہ خاموشی ،بدترین مہنگائی ،بے روزگاری اور آئی ایم ایف کی غلامی وسودی نظام کے خلاف جماعت اسلامی کاساتھ دیں ۔

(جاری ہے)

بلوچستان کے حکمران پارٹیاں ،حکومت واپوزیشن اور منتخب نمائندے باریاں لینے اور ذاتی مفادات کے حصول کیلئے مصروف ہیں۔انہوں نے کہاکہ وزیر اعظم عمران خان اور ان کی ٹیم نے پٹرولیم مصنوعات میں بار بار ناروااضافہ،اشیائے خوردنوش کی قیمتیں بڑھاکرانہیں عوام کی پہنچ سے دور،غریبوں پر علاج وتعلیم ،روزگار کے دروازے بند کرکے ناقابل معافی جرم کیا ہے ۔

جماعت اسلامی اس ظلم وجبر لوٹ مار کے خلاف عوام کی ترجمانی کرتے ہوئے میدان میں نکلی ہیں ہم لٹیروںسے عوام کو نجات دلائیں گے۔بدقسمتی سے حکمرانوں نے نہ اپنے خرچوں ولوٹ مار میں کمی کی نہ حکومتی سطح پرسادگی وقناعت اختیار کی نہ تنخواہوں واشاہ خرچیوں میں کمی کی صرف عوام کو قربانی کا بکرابناکر ملک کو آئی ایم ایف پر فروخت کردیا ۔غریب عوام سودسوزی وخودکشی پر مجبور ہوئے ہیں ۔

جماعت اسلامی اس ظلم کے خلاف ہفتہ احتجاج منائیگی ہم پورے ملک کی طرح بلوچستان بھر میں مہنگائی ،یہودی مالیاتی سودی اداروں کی غلامی،حکمرانوں کی لوٹ مار کے خلاف بھر پور احتجاج کریں گے عوام جماعت اسلامی کا ساتھ دیں لوٹ مار کیساتھ ساتھ بھاری سودی قرضوں پرقرضے لیے جارہے ہیں سودی پر سوددیا جارہا ہے عوام کی حالت روزبروزخراب ہورہی ہے ۔

ہر روزاشیائے ضروریہ کی قیمتوں میں اضافہ ہورہاہے معیشت آئی ایم ایف کے ملازمین کے حوالے کرکے وزیر اعظم اور ان کی نااہل بدعنوان ٹیم سب کے سب بے عمل دعوے کر رہے ہیں اپوزیشن بھی حکومت کے جرائم میں برابرکے شریک ہیں سودی بجٹ اپوزیشن کے تعاون سے پاس کیا گیا جو لمحہ فکریہ ہے یوٹیلٹی اسٹور جس سے غریب عوام کو کچھ ریلیف ملتا تھا وہ بھی عوام سے چھین لیا گیا نوجوان مایوسی کا شکار اور مستقبل سے ناامیدہے سودی قرضوں ،بے روزگاری،مہنگائی میں دو سو سے تین سوتک فیصد اضافہ ہوا۔

کرپشن کا بازارگرم ہے ملک دشمن قوتیں یہی چاہتی ہے کہ ملک میں کرپشن مہنگائی اور بے روزگاری میں اضافہ عوام کا پوچھنے والا کوئی نہ ہو اور ملک قرضوں میں ڈوبارہے عوام کا حل دیانت دار قیادت اور لوٹ مار سے پاک حکومت ہے جو جماعت اسلامی قائم کرسکتی ہے کروڑوں نوکریاں دینے والے اب عوام سے روزگارچھین رہے ہیں جو لمحہ فکریہ ہے عوام الناس نوجوانوں سمیت ہر طبقہ کو ملکر اپنے حقوق کے لیے آواز بلند کرنا ہو گا۔

جماعت اسلامی کا بدترین مہنگائی ،آئی ایم ایف کی غلامی اور بے روزگاری کے خاتمے تک جنگ جاری رہے گی ۔ملک کی معیشت،سیاست اور نظریہ پر مغربی ایجنٹ اورظالم سرمایہ دار و جاگیردار ہر طرح سے حملہ آور ہورہے ہیں اور یہ کھیل گزشتہ کئی دہائیوں سے کھیلا جارہا ہے۔حکمرانوں کے آشیر بادسے ہماری معیشت مکمل طور پر آئی ایم ایف اور ورلڈ بنک کے قبضہ میں ہے۔ امیر امیر ترین بن چکے اور غریب غریب ترین ہو گئے۔ یہ نظام جاری رہا تو نوجوان مزید بے روزگار ہوں گے، غربت بڑھے گی ، مگر جو طبقہ پہلے اربوں میں کھیل رہا ہے اس کی دولت میں مزید اضافہ ہو گا۔

کوئٹہ شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments