فروری کو کراچی تا اسلام آباد لانگ مارچ مہنگائی کے ناسور کے تابوت میں آخری کیل ثابت ہوگا ،سردارسربلند جوگیزئی

نا اہل اور ناکام حکومت کو اب گھر جانا ہوگا،پاکستان پیپلز پارٹی بلوچستان کے جنرل سیکرٹری روزی خان کاکڑ،سیکرٹری اطلاعات

پیر 17 جنوری 2022 23:27

کوئٹہ(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 17 جنوری2022ء) پاکستان پیپلز پارٹی بلوچستان کے رہنماوں نے کہا ہے کہ 27فروری کو کراچی تا اسلام آباد لانگ مارچ مہنگائی کے ناسور کے تابوت میں آخری کیل ثابت ہوگا ۔نا اہل اور ناکام حکومت کو اب گھر جانا ہوگا،24جنوری کسان مارچ کے حوالے سے بلوچستان بھر میں ضلعی ہیڈاکوارٹرز میں احتجاجی مظاہرے کئے جائیں صوبائی سطح پر کچلاک کے مین چوک پر احتجاجی مظاہرہ وگاپارٹی کے جیالے احتجاجی مظاہروں میں بھر پور شرکت کرکے حکمرانوں سے نفرت کا اظہارکریں۔

یہ بات پاکستان پیپلز پارٹی بلوچستان کے جنرل سیکرٹری روزی خان کاکڑ،سیکرٹری اطلاعات سردارسربلند جوگیزئی ، شیخ بلال مندوخیل ،حاجی خان محمد بڑیچ،ملک حمید کاکڑ،ملک ذیشان حسین، ضلع کوئٹہ کے صدر ملک نصیب اللہ شاہوانی ، کوئٹہ سٹی کے صدرنورالدین کاکڑ،صوبائی میڈیا کوارڈی نیٹرحیات خان اچکزئی ،منور لانگو،ثناء اللہ جتک ،صوبیدارجتک ،شہزادہ کاکڑ،شاہجہان گجر،الطاف گجر،رحمت اللہ کدیزئی،ڈاکٹر عبیداللہ،محی الدین رند،یونس ملازئی،غلام رسول سیلاچی،اکبر ترین ،جہانگیر بلوچ ، شیرمحمد ترین اوردیگر نے پیر کو پاکستان پیپلز پارٹی کوئٹہ سٹی کے دفتر میں پارٹیچیئرمین بلاول بھٹو زرداری کی قیادت میں 24 جنوری کے کسان مارچ اور 27 فروری کو ہونے والے لانگ کی تیاریوں کے حوالے سے صوبائی عہدیداروں،سینئر رہنماؤں،ضلع کوئٹہ، کوئٹہ سٹی، کوئٹہ ڈویژن، پیپلز یوتھ ونگ،پیپلز سٹوڈنٹس فیڈریشن،لیبر بیورو،ڈاکٹر فورم،اقلیتی ونگ،سپورٹس ونگ ،پیپلزپارٹی ژوب ڈویژن،ضلع مستونگ،ضلع سبی،ضلع لورالائی،ضلع ژوب،ضلع قلعہ سیف اللہ،ضلع پشین،ضلع کچھی بولان کے صدور سمیت پارٹی رہنماؤں و عہدیداروں کے مشاورتی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔

(جاری ہے)

انہوں نے کہا کہ نا اہل حکمرانوں کی ناقص پالیسیوں کی بدولت ملک معاشی بدحالی کا شکار ہے اور حکمرانوں نے ملک کوعملی طور پر آئی ایم ایف کے سپرد کردیا ہے جس کا واضح ثبوت منی بجٹ کی منظوری،پٹرولیم مصنوعات اور بجلی کی قیمتو ں میں آئی ایم ایف کے کہنے پر حالیہ اضافہ ہے ۔انہوں نے کہا کہ منی بجٹ ،پٹرولیم مصنوعات اور بجلی کی قیمتوں میں اضافے سے ملک میں مہنگائی کا نیا طوفان آئے گا اور ملک میں غربت بڑھے گی ۔

انہوں نے کہا کہ مہنگائی اور بے روزگاری کے ہاتھوں عوام دو وقت کی روٹی کیلئے ترس رہیں حکمران عوام کو ریلیف فراہم کرنے کی بجائے ،آٹا،چینی ،پٹرولیم ،ادویات چوروں کو تحفظ دینے میں مصروف ہیں۔انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی کے سونامی نے ملک کو تباہی کے دہانے پرلاکھڑا کیا ہے جس کی وجہ سے ہر شعبہ زندگی سے تعلق رکھنے والے افراد پریشانی سے دوچار ہیں۔

انہوں نے کہا کہ حکمرانوں نے ملک میں یوریا کھاد کی مصنوعی قلت پیدا کررکھی ہے اور کسانوں کو من مانی قیمتوں پریوریا کھاد دے رہے ہیں جس سے میں ملک میں زرعی اجناس کی پیدوار بری طرح متاثر ہونے کا خدشہ پیدا ہوگیا ہے ۔انہوں نے کہا کہ پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے موجودہ حکمرانوں کے خلاف اعلان جنگ کردیا ہے بلال بھٹو زرداری کی قیادت میں 24جنوری کو ملک بھر میں کسان مارچ ہوگیا اس سلسلے میں بلوچستان کے تمام ضلعی ہیڈکوارٹرز میں پیپلزپارٹی کے جیالے کسانوں کے ساتھ ملکر بھرپوراحتجاج کریں گے اور صوبائی سطح پر24جنوری کو کچلاک مین چوک پر صبح 10بجے احتجاجی مظاہرہ کیاجائے گا۔

انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی کے زیراہتمام 27فروری کو کراچی سے اسلام آباد تک لانگ مارچ کیا جائے گا جس میں ملک بھر کی طرح بلوچستان سے بھی پیپلز پارٹی کے جیالے بھرپور شرکت کریں گے اورانشاء اللہ پیپلز پارٹی کا لانگ مارچ اسلام آباد پہنچنے سے پہلے ہی وزیراعظم استعفیٰ دیکرگھر جاچکے ہونگے۔ انہوں نے کہا کہ لانگ مارچ کی کامیابی کیلئے صوبائی اورضلعی سطح پر کمیٹیاں قائم کی جائیں گی جو لانگ مارچ کے انتظامات کو حٹمی شکل دیں گی اس سلسلے میں 24جنوری کے بعد صوبائی صدر میر چنگیز خان جمالی کی قیادت میں ایک صوبے بھر کے عہدیداروں اور سینئر رہنماوں کا مشاورتی اجلاس طلب کیا جائے گا جس میں لانگ مارچ کی شرکت کے انتظامات کو حتمی شکل دی جائے گی۔

کوئٹہ شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments