جرائم کی بیخ کنی کے لئے عملی اقدامات ناگزیر ہیں،ڈپٹی کمشنرلورالائی

جمعرات 27 جنوری 2022 15:36

کوئٹہ۔(اردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار ۔ 27 جنوری 2022ء) :ڈپٹی کمشنرلورالائی ڈاکٹر عیتق الرحمن شاہوانی نے کہا ہے کہ جرائم کی بیخ کنی کے لئے زبانی  دعووں کی بجائے عملی اقدامات ناگزیر ہیں، ڈکیتی،راہزنی اوردیگر جرائم کے سدباب کیلئے ٹھوس حکمت عملی بنائی جائے کیونکہ عوام کی جان و مال کا  تحفظ اولین ترجیح ہے۔ان خیالات کااظہارانہوں نے جمعرات کو   امن و امان کے حوالے سے اپنی زیر صدارت  اہم اجلاس میں کیا۔

اجلاس میں ضلع میں امن وامان کی مجموعی صورتحال کا  جائزہ لیا گیا اور  لیویز تھانوں اور چوکیوں کے افسران نے ڈپٹی کمشنر لورالائی کو تفصیلی بریفنگ دی ۔ ڈپٹی کمشنر لورالائی نے  کہا کہ جرائم کی شرح بڑھنے پر متعلقہ لیویز افسر سے جواب طلبی کی جائے گی، عوام کی جان و مال کے تحفظ میں کوتاہی برتنے والے افسروں کو جواب دینا ہوگا، اعداد وشمار کی بجائے جرائم کے سدباب کے لئے عملی اقدامات کیے جائیں، امن وامان کی صورتحال کا باقاعدگی سے خود جائزہ لوں گاکیونکہ جرائم کا خاتمہ اورعوام کے جان و مال کا تحفظ  اولین ترجیح ہے، بہترین  کارکردگی کا مظاہر کرنے والے افسران کی حوصلہ افزائی کی جائے گی ،میرٹ کی بالادستی کو یقینی بنایاجائے، ضلع میں قانون کی عملداری کو ہر صورت  یقینی بنایا جائے گا۔

(جاری ہے)

انہوں نے کہا کہ  لیویز فورس  عوام کی خدمت میں کوئی کسر  نہ چھوڑیں،لیویز افسران ہر تحصیل  اور یونین  میں سائلین کے مسائل حل کریں، اہلکاروں کو عوام کے ساتھ خوش اخلاقی سے پیش آنا چاہیے ،سائل کو تھانوں میں تبدیلی کا احساس ہونا چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ  عوام کے جان و مال کا تحفظ لیویز کی ذمہ داری ہے تمام انچارج اپنے علاقوں میں گشت کو یقینی بنائیںاس سلسلے میں  کوتاہی برداشت نہیں کی جائے گی۔

  ڈپٹی کمشنر لورالائی نے سنگین جرائم میں ملوث اشتہاری مجرمان  کی گرفتاری کیلئے ضلع  بھر میں پور مہم چلانے کا حکم دیتے ہوئے کہا کہ انہیں  اشتہاری مجرمان  کی گرفتاری کے حوالے سے ہفتہ وار رپورٹ پیش کی جائے۔ اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ زیر التوا کیسوں کو جلد نمٹانے کے لئے تیزرفتاری سے اقدامات کیے جائیں گے۔ اجلاس میں اسسٹنٹ کمشنر بوری عبد النا صر اوتما نخیل، تحصیلدار ثناء اللہ لونی اور تمام لیویز افسران  نے شرکت کی ۔

متعلقہ عنوان :

کوئٹہ شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments