فرقہ واریت سے بچنے کے لئے دین اسلام کی طرف رجوع کرنا ہوگا، سید حامد سعید کاظمی

بدھ 13 اکتوبر 2021 16:58

رحیم یار خان(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - اے پی پی۔ 13 اکتوبر2021ء) خواجہ فرید یونیورسٹی آف انجینئرنگ اینڈ انفارمیشن ٹیکنالوجی رحیم یار خان میں رحمت الالعالمین ویک تقریبات کے حوالے سے"علماو مشائخ کانفرنس 2021" کا اہتمام ۔تقریب میں سابق وفاقی وزیر مذہبی امور و ناظم اعلیٰ جامعہ اسلامیہ عربیہ انوار العلوم ملتان سید حامد سعید کاظمی ،وائس چانسلر جامع فرید پروفیسر ڈاکٹر محمد سلیمان طاہر،  صدر قومی مشائخ کونسل پاکستان خواجہ غلام قطب الدین فریدی ، اسلامک  ریسرچ انسٹی ٹیوٹ بین الاقوامی اسلامی یونیورسٹی اسلام آباد ڈاکٹر آفتاب ، سجادہ نشین دربارِ فرید معین الدین محبوب کوریجہ کے نمائندہ، مولانا عامر فاروق عباسی، سید محمد اسد اللہ اسد، قاری ظفر شریف، میاں نوید الحسن حیات نقشبندی، علامہ محمد اکرم اویسی، مولانا محمد اویسی اور دیگر مقررین نے شرکت کی۔

(جاری ہے)

کانفرنس کے منتظمین میں سربراہ شعبہ ہیومینیٹز اینڈ سوشل سائنسز ڈاکٹر ثمینہ ثروت ، چیف آرگنازئر ڈاکٹر شاہد حبیب ، عابد علی اور دیگرشامل تھے جبکہ کانفرنس میں سینئر ڈین آف آل فیکلٹیز پروفیسر ڈاکٹر ارشد منیر لغاری، ایسوسی ایٹ ڈینز، اسسٹنٹ ڈینز ،  ہیڈ آف ڈیپارٹمنٹس اور مختلف مکاتب ِ فکر کے لوگوں نے شرکت کی۔سید حامد سعید کاظمی نے کہاکہ اس وقت  امت ِ مسلمہ کو اتحاد کی ضرورت ہے،ہمیں  فرقہ واریت سے بچنے کے لئے دین اسلام کی طرف رجوع کرنا ہوگا، نوجوان نسل کو علماکرام کی صحبت میں بیٹھنے کی ضرورت ہے جس سے ان میں  والدین اور اساتذہ کا ادب پیدا ہوسکے، اور ان میں  نوجوان نسل میں معاشرتی اقدار پھر سے پیدا ہوسکیں۔

وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر محمد سلیمان طاہر نے کہا کہ سیرت النبی صلی اللہ علیہ وسلم پہ عمل پیرا ہوکر ہم نہ صرف متحد ہوسکتے ہیں بلکہ سائنس کی دنیا میں انقلاب پربا کرسکتے ہیں ۔

رحیم یار خان شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments