اُردو پوائنٹ پاکستان راولپنڈیراولپنڈی کی خبریںنواز شریف سے ملاقات کے لیے اڈیالہ جیل آمد، ایاز صادق ڈپٹی سپریٹنڈنٹ ..

نواز شریف سے ملاقات کے لیے اڈیالہ جیل آمد، ایاز صادق ڈپٹی سپریٹنڈنٹ سے اُلجھ پڑے

میں تمہیں دیکھ لوں گا۔ ایاز صادق نے دھمکی بھی دے ڈالی

راولپنڈی (اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 19 جولائی 2018ء): سابق وزیر اعظم نواز شریف سے ملاقات کے لیے آئے ایاز صادق جیل کے ڈپٹی سپریٹنڈنٹ سے ہی اُلجھ پڑے ۔ میڈیا رپورٹ کے مطابق آج اڈیالہ جیل میں سابق وزیر اعظم نواز شریف اور مریم نواز سے ملاقات کا دن تھا جس کے تحت آج اڈیالہ جیل میں ملاقاتیوں کا تانتا بندھا رہا۔ میڈیا رپورٹ کے مطابق اسپیکر قومی اسمبلی سردارایاز صادق سابق وزیر اعظم نواز شریف سے ملاقات کے لیے اڈیالہ جیل پہنچے تو جیل کے ڈپٹی سپریٹنڈنٹ نے گاڑی کی تلاشی دینے کو کہا ۔

جس پر ایاز صادق ڈپٹی سپریٹنڈنٹ جیل سے اُلجھ پڑے۔ ایاز صادق کا کہنا تھا کہ میں گاڑی کی تلاشی نہیں دوں گا جس پر ڈپٹی سپریٹنڈنٹ نے ایاز صادق سے کہا کہ تلاشی کے بغیر گاڑی کو اندر جانے کی اجازت نہیں ہے۔

(خبر جاری ہے)

ڈپٹی سپریٹنڈنٹ جیل کی اس بات پر ایاز صادق نے اپنے اسٹاف کو ہدایت کی کہ ڈپٹی سپریٹنڈنٹ کا نام نوٹ کرو اور خود ڈپٹی سپریٹنڈنٹ کو دھمکاتے ہوئے کہاکہ میں تمہیں دیکھ لوں گا۔

یاد رہے کہ سابق وزیراعظم نواز شریف اور مریم نواز اڈیالہ جیل میں قید ہے او ان سے ملاقات کے لیے جیل انتطامیہ نے جمعرات کا دن مقرر کر رکھا ہے۔نواز شریف اور مریم نواز سے آج اڈیالہ جیل میں شریف خاندان کے 17 افراد ملاقات کریں گے۔ ملاقاتیوں کی فہرست میں 23 ن لیگی رہنماؤں اور 11 وکلا کے نام بھی شامل ہیں۔ ملاقات کے لیے آنے والے ن لیگی رہنماؤں میں ایاز صادق، خواجہ سعد رفیق، آصف کرمانی سمیت دیگر شامل ہیں۔

جیل ذرائع کے مطابق ملاقات کے لیے آنے والوں کو شناختی کارڈ کے بغیر جیل میں داخلے کی اجازت نہیں ہو گی جبکہ ہر ملاقاتی کو 20 منٹ کا وقت دیا جائے گا۔خیال رہے کہ دو روز قبل اڈیالہ جیل میں نواز شریف اور مریم نواز کی سیکیورٹی کو ریڈ الرٹ کر دیا گیا تھا۔ نواز شریف کی سکیورٹی پر چھ اہلکار تعینات جبکہ ان کے ساتھ ایک مشقتی بھی کام کر رہا ہے۔

جیل ذرائع نے بتایا کہ مریم نواز کی سیکیورٹی پر خاتون ڈپٹی سپریٹنڈنٹ سمیت 6 خواتین اہلکار تعینات کی گئی ہیں۔ جیل کھولنے کے دوران نواز شریف کو محدود رہنے جبکہ مریم نواز کو بھی محتاط رہنے کی ہدایت کی گئی۔نواز شریف اور مریم نواز کو سہالہ ریسٹ ہائوس منتقل کرنے کے لیے جیل انتظامیہ نے حتمی فیصلہ کر لیا گیا ہے جس کے تحت آئندہ چند روز میں سابق وزیر اعظم نواز شریف اور ان کی صاحبزادی مریم نواز کو سہالہ ریسٹ ہائوس منتقل کیے جانے کا امکان ہے۔ذرائع کے مطابق یہ فیصلہ سکیورٹی خدشات کے پیش نظر کیا گیا ہے۔

اپنی رائے کا اظہار کریں -

راولپنڈی شہر کی مزید خبریں