پاک افغان بارڈر پر نصب بارودی مواد کا دھماکہ

دھماکے کے نتیجے میں میجر عدیل اور سپاہی فراز جام شہادت نوش کر گئے۔ آئی ایس پر آر

Muqadas Farooq مقدس فاروق اعوان جمعہ ستمبر 15:39

پاک افغان بارڈر پر نصب بارودی مواد کا دھماکہ
راولپنڈی (اردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔20ستمبر 2019ء) پاک افغان بارڈر پر نصب بارودی مواد کا دھماکہ ہوا ہے جس کے نیتجے میں پاک فوج کے ایک افسر اور ایک جوان شہید ہو گئے۔پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ آئی ایس پی آر کے مطابق پاک افغان سرحد پر بارودی دھماکے میں پاک فوج کے میجر اور ایک سپاہی شہید ہو گئے۔شہید ہونے والوں میں میجر عدیل اور سپاہی فراز شامل ہیں۔

آئی ایس پی آر کا مزید کہنا ہے کہ شہید افسر کی نگرانی میں سرحد پر باڑ لگائی جا رہی تھی۔ میجر عدیل اور سپاہی فراز نے مہند ڈسٹرکٹ میں جام شہادت نوش کیا۔
۔واضح رہے ا س سے قبل رواں ماہ دیر میں پاک افغان بارڈر پر افغانستان سے دہشتگردوں نے فائرنگ کی تھی۔میڈیا رپورٹس میں بتایا گیا تھا کہ پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ آئی ایس پی آر کے مطابق مغربی سرحد پر باڑ لگانے والے فوجی جوانوں پر دہشت گردوں نے فائرنگ کر دی۔

(جاری ہے)

آئی ایس پی آر کے مطابق شمالی وزیرستان میں مغربی بارڈر کے قریب 2 مختلف واقعات میں 4 فوجی شہید ہو گئے ۔ آئی ایس پی آر کے مطابق شمالی وزیرستان میں دہشت گردوں نے ابا خیل اور اسپین وام کے قریب سیکورٹی فورسز پر فائرنگ کی۔ ۔فائرنگ کے تبادلے میں 2 دہشت گرد بھی ہلاک ہو گئے۔آئی ایس پی آر کا مزید کہنا تھا کہ حملے میں بلتستان سے تعلق رکھنے والے 23 سالہ سپاہی اختر حسین شہید ہوئے۔

دوسرا واقعہ پاک افغان سرحد پر پیش آیا جس کے نتیجے میں تین سپاہی شہید ہوئے۔ شہید ہونے والے پاک فوج کے جوان سرحدی باڑ لگانے میں مصروف تھے جب ان پر فائرنگ کی گئی؛ جس کے نتیجے میں پاک فوج کے تین جوان شہید ہوئے جب کہ دہشت گردوں کی فائرنگ سے ایک فوجی جوان بھی زخمی ہو گیا۔ شہدا میں سپاہی کاشف علی بھی شامل ہیں جن کی عمر 22 سال تھی۔فائرنگ میں لانس نائیک امین آفریدی بھی جامِ شہادت نوش کر گئے جن کی عمر 28 سال تھی۔اور ان کا تعلق ضلع خیبر سے تھا۔جب کہ شہید ہونے والے 31 سالہ شہید لانس نائیک محمد شعیب کا تعلق مانسہرہ سے تھا۔

راولپنڈی شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments