زینب الرٹ بل کے تحت پہلے مجرم کو سزا سنادی گئی

بچوں کو زیادتی کا نشانہ بنا کر بلیک میل کرنے پر 10 سال قید ٗ 50 ہزار روپے جرمانہ کر دیا گیا

Salman Javed Bhatti سلمان جاوید بھٹی منگل 14 جنوری 2020 11:47

زینب الرٹ بل کے تحت پہلے مجرم کو سزا سنادی گئی
ٹیکسلا (اردوپوائنٹ تازہ ترین اخبار-14 جنوری 2020ء)   قومی اسمبلی سے زینب الرٹ بل پاس ہونے کے بعد پہلے مجرم کو سزا سنا دی گئی۔ تفصیل کے مطابق ٹیکسلا کی انسداد دہشتگردی کی عدالت نے بچوں سے زیادتی کرکے ویڈیو کے ذریعے بلیک میل کرنے والے مجرم کو دس سال کی قید سنادی ہے۔ جبکہ ملزم جعفرپر 50ہزار روپے جرمانہ کر دیا گیا ۔ ملزم نے بچے کو بعدفعلی کا نشانہ بنانے کے بعد بلیک بھی کیا جس پر بچے نے بلیک میلنگ سے بچنے کیلئے خود کشی کی کوشش  کی تھی ۔

واضح رہے قصور میں ننھی زینب کے ساتھ پیش آنے والے واقع کو دو برس مکمل ہونے پر قومی اسمبلی میں زینب الرٹ بل کی منطور ی دے دی گئی تھی جس کے بعد لاپتہ بچوں کی بازیابی کو رپورٹ کرنے کے لئے ایک ایجنسی تشکیل دی جائے گی جس میں لاپتہ ہونے والے بچوں کی رپورٹ جمع کروائی جائے گی اور اس پر فوری کارروائی کا آغاز کیا جائے گا۔

(جاری ہے)

ایجنسی کا نام ننھی زینب کے نام سے منسوب ہو گا ، جس کا نام زینب الرٹ ریسپونس اینڈ ریکوری (ZARRA) ہو گا۔

اس ایجنسی کو بنانے کا مقصد پاکستان میں برھتی ہوئی جنسی زیادتی کو روکنا ہے۔واضح رہے کہ پاکستان میں جنسی زیادتی اور بچوں کے ساتھ زیادتی کے بے شمار واقعات سامنے آتے ہیں ، کچھ پر کارروائی ہوتی ہے کچھ پر نہیں۔دو سال قبل قصور میں بھی ایسا ہی دل دہلادینے والاواقعہ پیش آیا جس پر پوری قوم ایک ہو گئی اور زینب کے لئے سڑکوں پر نکل آئی۔ ن لیگ کی حکومت میں پیش آنے والے یہ واقع نے پوری قوم کو متحد کر دیا اور ہرکوئی صرف زینب کے بارے میں بات کر رہا تھا۔ یاد رہے کہ دو سال قبل دن قصور میں ننھی زینب کی لاش ملی تھی جسے زیادتی کے بعد مار کر پھینک دیاگیا تھا۔ یہ واقع اس وقت پیش آیا جب زینب کے والدین عمرے کی سعادت حاصل کرنے گئے ہوئے تھے۔

راولپنڈی شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments