وزیراعظم سے کہا گیا تھا کہ آپ سے ڈی جی آئی ایس آئی کے معاملے پر آپ سے بات ہو چکی تھی

وزیراعظم عمران خان نے جواب میں کہا کہ مجھ سے کیوں نہیں پوچھا گیا ؟ کچھ وزرا کی بھی آرمی چیف سے ملاقات ہوئی۔ سینئیر تجزیہ کار عارف حمید بھٹی

Sumaira Faqir Hussain سمیرا فقیرحسین بدھ 27 اکتوبر 2021 15:31

وزیراعظم سے کہا گیا تھا کہ آپ سے ڈی جی آئی ایس آئی کے معاملے پر آپ سے بات ہو چکی تھی
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 27 اکتوبر 2021ء) : نجی ٹی وی چینل جی این این کے پروگرام میں بات کرتے ہوئے سینئیر صحافی و تجزیہ کار عارف حمید بھٹی نے کہا کہ واحد فوج ایک ایسا ادارہ ہے جہاں اگر آرمی چیف کا بیٹا بھی آ گیا تو وہ بھی نظم و ضبط کے حوالے سے ہی ترقی حاصل کرے گا، اُسے بھی تمام مشکل حالات سے گزرنا ہو گا اور اپنے فرائض انجام دینا ہوں گے۔

انہوں نے کہا کہ فوج کے ادارے میں شارٹ کٹ کبھی نہیں اپنایا گیا۔ وزیراعظم عمران خان اور آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کے مابین ہوئی ملاقات سے متعلق بات کرتے ہوئے عارف حمید بھٹی نے کہا کہ چھ اکتوبر سے لے کر 26 اکتوبر تک کئی ملاقاتیں ہوئیں، وزیراعظم عمران خان سے کہا گیا کہ آپ سے پہلے بھی بات ہوئی تھی جس پر وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ آپ نے مجھ سے کیوں نہیں پوچھا ، مجھے اس کو اپنے طریقے سے ہینڈل کرنے دیں۔

(جاری ہے)

کچھ وزرا نے بھی آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ سے ملاقات کی اور یہ بات 6 اکتوبر کی ہے۔ تاہم اب اللہ کرے کہ اب یہ ملکی ترقی اور خوشحالی کے لیے کام کریں کیونکہ پاک فوج ملک کی ریڑھ کی ہڈی ہے اور ہماری سلامتی کی ضمانت ہے۔ عارف حمید بھٹی نے کہا کہ میرے خیال سے یہ نا مناسب تھا۔ اسے متنازعہ نہیں بنانا چاہئیے۔ ایک تعیناتی جو دو اشخاص کے مابین تھی ، وہ کابینہ میں گئی، پارلیمانی پارٹی میں گئی اور پھر میڈیا میں بھی گئی۔

کاش ایسا نہ ہوتا، دنیا بھر کے جتنے بھی ممالک ہیں وہاں کے انٹیلی جنس ایجنسیوں کے سربراہان کی تقرریوں میں اس قسم کی تاخیر نہیں کی جاتی نہ ہی ان کے سربراہان کو اتنی طول دی جاتی ہے۔ سینئیر صحافی و تجزیہ کار عارف حمید بھٹی نے مزید کیا کہا آپ بھی دیکھیں:

راولپنڈی شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments