کالعدم تنظیم کے احتجاج کے پیش نظر راولپنڈی میں سکیورٹی مزید سخت کر دی گئی

سکستھ روڈ، چاندنی چوک، لیاقت باغ، مری چوک اور کمیٹی چوک پر مزید کنٹینرز کھڑے کردیے گئے

Sumaira Faqir Hussain سمیرا فقیرحسین جمعرات 28 اکتوبر 2021 10:32

کالعدم تنظیم کے احتجاج کے پیش نظر راولپنڈی میں سکیورٹی مزید سخت کر دی گئی
راولپنڈی (اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 28 اکتوبر 2021ء) : کالعدم تنظیم کے احتجاج اور دھرنے کے پیش نظر راولپنڈی کی سکیورٹی مزید سخت کر دی گئی ہے۔ روزنامہ جنگ میں شائع رپورٹ کے مطابق راولپنڈی میں سیکورٹی مزید سخت کردی گئی ہے جبکہ مری روڈ کو دونوں اطراف سے ٹریفک کے لیے بند کردیا گیا۔ سکستھ روڈ، چاندنی چوک، لیاقت باغ، مری چوک اور کمیٹی چوک پر مزید کنٹینرز کھڑے کردیے گئے ہیں۔

راولپنڈی میٹرو بس سروس بھی تا حکم ثانی بند ہے۔ اس کے علاوہ راولپنڈی مری روڈ کے اطراف کاروباری مراکز بھی بند ہیں۔ مختلف علاقوں میں رکاوٹوں کے باعث شہریوں کو مشکلات کا سامنا ہے۔ یاد رہے کہ لاہور سے شروع ہونے والا کالعدم تنظیم کا لانگ مارچ مریدکے میں قیام کے بعد سادھوکی سے ہوتا ہوا کامونکی پہنچ گیا، کامونکی میں رات پڑاؤ کے بعد مظاہرین صبح گوجرانوالہ کی طرف روانہ ہونے کی اطلاعات موصول ہوئی تھیں۔

(جاری ہے)

مظاہرین کے دھرنے اور احتجاج کے پیش نظر ہی مختلف مقامات پر پولیس اور رینجرز کی بھاری نفری تعینات کی گئی ہے۔ جی ٹی روڈ پر کنٹینر لگانے کے ساتھ ساتھ خندقیں بھی کھودی گئی ہیں۔ یاد رہے کہ گذشتہ روز حکومت نے کالعدم تنظیم سے آہنی ہاتھوں نمٹنے کا فیصلہ کیا تھا۔ ذرائع کے مطابق حکومت اور سکیورٹی ادارے کالعدم تنظیم سے سختی سے نمٹنے کے لیے ایک پیج پر ہیں۔

حکومت نے فیصلہ کر لیا ہے کہ ریاستی رٹ کو چیلنج کرنے والوں کو برداشت نہیں کیا جائے گا۔ کالعدم تنظیم نے احتجاج کی آڑ میں رااستے بند کر رکھے ہیں جس سے شہریوں کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ ذرائع کے مطابق حکومت نے فیصلہ کیا کہ کالعدم تنظیم سے کسی قسم کے مذاکرات نہیں کیے جائیں گے نہ ہی لانگ مارچ کی اجازت دی جائے گی۔ حکومت نے کالعدم تنظیم کے لانگ مارچ کو طاقت سے روکنے کا فیصلہ کر لیا گیا ہے۔

سیاسی مقاصد پورے کرنے کے لیے کسی قسم کا تشدد کا راستہ اپنانے کی اجازت نہیں دی جائے گی۔ میڈیا رپورٹ کے مطابق مظاہرین کی شہر شہر میں گرفتاریاں عمل میں لائی جائیں گی۔ مظاہرین کو اسلام آباد میں داخل ہونے سے روکا جائے گا اور اسلام آباد کے داخلہ راستوں پر رکاوٹیں اور سکیورٹی کی نفری بھی تعینات کی جائے گی۔ تاہم گذشتہ روز ہی لاہور سمیت پنجاب بھر میں 60 دن کے لیے رینجرز تعینات کر دی گئی تھی۔

وزارت داخلہ کی جانب سے جاری کردہ نوٹیفکیشن کے مطابق پنجاب میں رینجرز کو 2 ماہ کے لیے تعینات کیا گیا ہے۔جن 8 اضلاع میں رینجرز اہلکار اپنے فرائض سر انجام دیں گے ان میں لاہور، راولپنڈی، جہلم، شیخوپورہ، گوجرانوالہ، چکوال، گجرات، فیصل آباد شامل ہیں۔ وزارت داخلہ کی طرف سے نوٹی فی کیشن بھی جاری کر دیا گیا۔

راولپنڈی شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments