راولپنڈی ، ماڈل عدالتوں نے ایک دن میں 1ہزار21 مقدمات کا فیصلہ سنا دیا

منگل اکتوبر 23:50

راولپنڈی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - آن لائن۔ 22 اکتوبر2019ء) چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس آصف سعید خان کھوسہ کی ہدائیت پر پاکستان بھر میں قائم 465 ماڈل عدالتوں نے گزشتہ روزمجموعی طور پر 1ہزار21 مقدمات کا فیصلہ سنا دیا جن میں2مجرمان کو سزائے موت9کو عمر قید کی سزا سنائی گئی جبکہ دیگر32 مجرمان کو کل49سال16 دن قیدجبکہ2کروڑ24لاکھ83ہزار910روپے جرمانہ کی سزا ئیں سنائی گئیں ڈائریکٹر جنرل مانیٹرنگ سیل سہیل ناصر کے مطابق 182 ماڈل فوجداری ٹرائل عدالتوں نے قتل کی52اور منشیات کی132مقدمات یعنی184مقدمات کا فیصلہ سنایا عدالتوں نے 932گواہان کے بیانات بھی قلمبند کیے صوبائی سطح پر پنجاب میں قتل کی20اور منشیات کی77، سندھ میں قتل کی17اور منشیات کی25، خیبر پختونخواہ میں قتل کی13اور منشیات کی29 جبکہ بلوچستان میں قتل کی2اور منشیات کی1مقدمات کا فیصلہ ہواملک بھر میں قائم 125سول ایپلٹ ماڈل عدالتوں نے مجموعی طور پر 410دیوانی، فیملی اور رینٹ اپیلوں و درخوست نگرانی نمٹائیںاسی طرح158 ماڈل مجسٹریٹس عدالتوں نی427مقدمات کے فیصلے سناتے ہوئے عدالتوں نی1144گواہان کے بیانات قلمبند کیے جبکہ مجموعی طور پر 173مجرموں کو 135سال،22ماہ اور30دن قید اور 14936868روپے جرمانہ کی سزا سنائی گئی۔

راولپنڈی شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments