اُردو پوائنٹ پاکستان ساہیوالساہیوال کی خبریںساہیوال،مرضی کیخلاف منگنی کرنے پر دوشیزہ اورگھریلو پریشانیوں سے تنگ ..

ساہیوال،مرضی کیخلاف منگنی کرنے پر دوشیزہ اورگھریلو پریشانیوں سے تنگ نوجوان نے زندگی کا خاتمہ کر لیا

ساہیوال( اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔23ستمبر ۔2016ء)نواحی گاؤں نور پور خورد میں ایک بیس سالہ لڑکی فرحت نے مرضی کے خلاف منگنی پر زہر پی کر زندگی کا خاتمہ کر لیا ۔واقعات کے مطابق اسی گاؤں کے غلام مرتضیٰ کی بیس سالہ بیٹی فرحت کی منگنی اس کی مرضی کے خلاف والدین نے طے کر دی جس پر فرحت نے زہر پی لیا جسے بیہوشی کی حالت میں سول ہسپتال ساہیوال لایا گیا مگر وہ دم توڑ گئی۔

(خبر جاری ہے)

دریں اثناء چک 12-65ایل میں گھریلوپریشانیوں پر ایک ستائیس سالہ نوجوان محمد طارق نے گند م میں رکھنے والی زہریلی گولیاں کھا کر زندگی کا خاتمہ کر لیا ۔ متوفی محمد طارق کا گھریلومسائل پر والدین سے جھگڑا رہتا تھا کہ اس کے باپ محمد حفیظ نے سرزنش کی تو دلبرداشتہ ہوکر محمد طارق نے زہریلی گولیاں کھا لیں جسے بیہوشی کی حالت میں سول ہسپتال ساہیوال لایا گیا مگر وہ دم توڑ گیا۔


اپنی رائے کا اظہار کریں -

ساہیوال شہر کی مزید خبریں