وزیراعلیٰ پنجاب نے 36 اضلاع سے فوری طور پر 10 سالوں میں سرکاری دفاتر میں لگنے والی آگ اور جلنے والی ریکارڈ کی تفصیلات طلب کرلیں

منگل نومبر 23:19

وزیراعلیٰ پنجاب نے 36 اضلاع سے فوری طور پر 10 سالوں میں سرکاری دفاتر میں ..
سرگودھا(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 20 نومبر2018ء) وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار نے سرگودھا سمیت صوبہ بھر کے 36 اضلاع سے فوری طور پر 10 سالوں میں سرکاری دفاتر میں لگنے والی آگ اور جل جانے والے ریکارڈ کی تفصیلات طلب کر لی ہیں، پچھلے 10 سالوں میں سرگودھا سمیت صوبہ بھر کے 36 اضلاع میں کئی سرکاری محکموں کے ریکارڈ میں آگ لگی اور ریکارڈ بھی جل کر خاکستر ہو گیا تھا ،شریف فیملی کو خضرآباد میں الاٹ کی جانے والی اراضی کا ریکارڈ بھی موجود تھا۔

(جاری ہے)

ذرائع کے مطابق وزیراعلیٰ پنجاب نے چیف سیکٹری پنجاب سے فوری طور پر گذشتہ 10 سالوں میں سرکاری دفاتر میں لگنے والی آگ اس سے ہونے والے نقصانات کے ساتھ ساتھ ریکارڈ کی بھی مفصل رپورٹ طلب کر لی ہے، جس پر چیف سیکرٹری پنجاب نے سرگودھا سمیت صوبہ بھر کے تمام سرکاری دفتروں کے افسران سے فوری طور پر رپورٹ طلب کر لی ہے، ذرائع کے مطابق بیوروکریسی نے سرگودھا، راولپنڈی ، لاہور سمیت دیگر اضلاع میں محکمہ مال سمیت دیگر اہم سرکاری اداروں کے ریکارڈ کو آگ لگوائی جانے کی اطلاعات ہے جس میں قیمتی ریکارڈ کو جان بوجھ کر آگ کی نظر کیا گیا ہے، جس پر وزیراعلیٰ پنجاب نے سرگودھا سمیت صوبہ بھر کے 36 اضلاع اور 144 تحصیلوں سے فوری طور پر سرکاری دفاتر میں لگنے والی آگ کی تفصیلات طلب کی ہیں یاد رہے 3 سال قبل محکمہ مال سرگودھا میں بھی چاند رات کو موضع شاہ پور ، موضع بھلوال ، اور تحصیل کے دیگر اہم موضع جات جس میں مثلیں ، عدالتی فیصلے، تحصیل دار، اے سی ، مجسٹریٹ سمیت دیگر ہونے والے فیصلوں کے ریکارڈ بھی موجود تھے کو آگ لگا دی گئی تھی، ذرائع کے مطابق موضع بھلوال میں لگنے والی آگ کے باعث حمزہ شہباز کو بھلوال کے قریب خضرآباد فارم کی 99 سالہ پٹے پر دیئے جانے کی مفصل فائل بھی موجود تھی ،

سرگودھا شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments