سرگودھا،دربار پر چار خواتین سمیت 20 افراد کے مقدمہ قتل کی سماعت 26 نومبر تک ملتوی کر دی گئی

منگل نومبر 18:43

سرگودھا(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 19 نومبر2019ء) انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت سرگودھانے نواحی چک 95 شمالی میں دربار پر چار خواتین سمیت 20 افراد کے مقدمہ قتل کی سماعت 26 نومبر تک ملتوی کر دی۔ذرائع کے مطابق سرگودھا کینواحی چک 95 شمالی دربار پر چارخواتین سمیت 20 افراد کو قتل اور دو خواتین سمیت چار افراد کو مضروب کرنے پر تھانہ صدر میں دہشت گردی، قتل،اقدام کی مختلف دفعات کے تحت درج مقدمہ کی سماعت انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت سرگودھا کے جج عتیق الرحمن کر رہے ہیں ۔

نواحی چک 95 شمالی میں دربار پر تشدد سے چار خواتین سمیت 20 افراد کو قتل اور دو خواتین سمیت چار افراد کو مضروب کرنے کا مقدمہ یکم اگست 2017 کو تھانہ کینٹ پولیس نے درج کر کے چاروں ملزمان کو گرفتار کر کے چالان مکمل کر کے خصوصی عدالت پیش کیا جس کی گزستہ دنوں مقدمہ کی سماعت پر ملزمان کو عدالت پیش کر کے ان پر جرح مکمل ہو ئی۔

(جاری ہے)

گزشتہ روز وکلاء کی بحث کے بعد سماعت 26 نومبر تک ملتوی کر دی گئی۔

اس کیس میں اب تک مقتولین کا پوسٹمارٹم کروانے والے پانچ گواہان پولیس ملازمین کے علاوہ مقتولین کی نعشوں کی شناخت کرنے والے ورثاء کے بیانات اور مقتولین کا پوسٹمارٹم کرنے والی دو لیڈی ڈاکٹر سمیت تین ڈاکٹرز اور پولیس ملازمین پوسٹمارٹم اور زخمیوں کی میڈیکل رپورٹ کرنے والے 2 ڈاکٹرز اور تفتیشی انسپکٹر راجہ ارشد سمیت تمام گواہان کی شہادتیں قلم بند کر کے مرکزی ملزم پیر عبدالوحید سمیت ملزمان کے بیانات پر جرح مکمل ہوچکی ہے۔

اس مقدمہ میں ملوث ملزمان مرکزی کردار پیر عبدالوحید اور اس کے ساتھیوں کاشف، آصف ،ظفر کو پولیس نے جیل سے عدالت پیش کیا۔اس موقع پر سکیورٹی کے فول پروف انتظامات کئے گے۔اب 26 نومبر کو مقدمہ کی دوبارہ سماعت ہو گی اور ملزمان کو خصوصی عدالت پیش کیا جائے گا اور اس مقدمہ کا فیصلہ بھی جلد متوقع ہے۔

سرگودھا شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments