روہڑی کے نواحی گاؤں ولی محمد جتوئی کے مکینوں کابرادری کے بااثر افراد کی مبینہ زیادتی اور مغوی نوجوان کی بازیابی کیلئے احتجاجی مظاہرہ

اتوار اکتوبر 19:45

سکھر (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 25 اکتوبر2020ء) روہڑی کے نواحی گاؤں ولی محمد جتوئی کے مکین دین محمد جتوئی ،اسحاق جتوئی و دیگر نے برادری کے بااثر افراد کی مبینہ زیادتی اور مغوی نوجوان کی بازیابی کیلئے احتجاج کرتے ہوئے بتایا کہ جوابدار سیف الدین،مالک ڈنو،منصب،شمس الدین،عبدالصبور و دیگر کیساتھ ہمارازمین تنازعہ چل رہا ہے 14دن قبل جوابداروں نے زمینوں پر مویشی چرانے والے ہمارے عزیزوں امتیاز علی،عزیزہدایت اللہ،امان اللہ پر حملہ کرکے مویشی لوٹ لئے اور دس سالہ نوجوان امتیاز علی ولد ولی محمد کو اغواء کرلیا ہے جھانگڑو تھانے کی پولیس واقعہ کی رپورٹ درج کرنے سے انکار کررہی ہے پولیس ہمیں تحفظ فراہم کرنے کے بجائے جوابداروں کا ساتھ دے رہی ہے چند روز قبل شکایت پر جوابداروں نے مسلح ہوکر ہمارے گھروں پر حملہ کیا اور گھر میں موجود خواتین اوربچوں کو تشدد کانشانہ بنایا مزحمت پر ولی محمد و دیگر کو زخمی کردیا ہے اور کیس واپس لینے کیلئے سنگین نتائج کی دھمکیاں دے رہے ہیں مظاہرین نے بالا حکام سے نوٹس لیکر ملوث جوابداروں کو گرفتار کرکے مغوی نوجوان کو بازیاب اور لوٹے گئے مویشی واپس کرانے کا مطالبہ کیا ہے۔

متعلقہ عنوان :

سکھر شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments