سجاول میں آبی ذخائر پر سائبیرین پرندوں کی آمد کے ساتھ ہی ان کا غیرقانونی شکار جاری

بدھ 20 اکتوبر 2021 23:41

سجاول (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 20 اکتوبر2021ء)سجاول میں آبی ذخائر پر سائبیرین پرندوں کی آمد کے ساتھ ہی ان کا غیرقانونی شکار جاری ہے، ریکارڈنگ اور جال کی مدد سے پرندوں کو پکڑنے کے بعد شکاری انہیں مختلف شہروں میں کھلے عام فروخت کررہے ہیں، جبکہ شہری انہیں خرید کر مرغیوں کے پنجروں والے قصائیوں سے صفائی کراکے گوشت نکلواتے نظرآتے ہیں، متعلقہ محکمہ کی جانب سے اس غیرقانونی شکار کو روکنے کے بجائے کمیشن فکس کردیاگیاہے، ذرائع کا کہناہے کہ ساحلی علاقوں میں بحری باز کا شکار بھی جاری ہے اور درجنوں قیمتی بحری باز پکڑکر بیس سے پچاس لاکھ میں فروخت کئے جاچکے ہیں، ایسے ہی ایک پکڑے گئے باز کی نیلامی جاتی شہرکے قریب ہوئی جس میں متعلقہ گیم عملے کی موجودگی اور لاکھوں روپے کمیشن لینے کی ویڈیوں وائرل ہونے کی خبریں بھی سامنے آئی ہیں، مذکورہ صورتحال میں سرکاری عملے کی سرپرستی میں نایاب نسل پرندوں کا شکار اور نسل کشی جاری ہے۔

ٹھٹھہ شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments