Yeh Sochna Ghalat Hai Ke Tum Par Nazar Nahi

یہ سوچنا غلط ہے کہ تم پر نظر نہیں

یہ سوچنا غلط ہے کہ تم پر نظر نہیں

مصروف ہم بہت ہیں مگر بے خبر نہیں

اب تو خود اپنے خون نے بھی صاف کہہ دیا

میں آپ کا رہوں گا مگر عمر بھر نہیں

آ ہی گئے ہیں خواب تو پھر جائیں گے کہاں

آنکھوں سے آگے ان کی کوئی رہ گزر نہیں

کتنا جئیں کہاں سے جئیں اور کس لئے

یہ اختیار ہم پہ ہے تقدیر پر نہیں

ماضی کی راکھ الٹیں تو چنگاریاں ملیں

بے شک کسی کو چاہو مگر اس قدر نہیں

آلوک شریواستو

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(561) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of AALOK SHRIVASTAV, Yeh Sochna Ghalat Hai Ke Tum Par Nazar Nahi in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 12 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.5 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of AALOK SHRIVASTAV.