Lag Jaey Jis Ki Jaan Ko Azaar Ishq Ka

لگ جائے جس کی جان کو آزار عشق کا

لگ جائے جس کی جان کو آزار عشق کا

بچتا نہیں وہ دوستو بیمار عشق کا

رہتی نہیں وجود میں چلنے کی تاب بھی

گویا بڑا شدید ہے اک وار عشق کا

مر کر ہی اس کے پاؤں سے اتری ہیں بیڑیاں

اک بار جو ہوا ہے گرفتار عشق کا

نقصان سارے عشق کے معلوم ہیں مگر

دل میرا آج بھی ہے طلبگار عشق کا

یارو سنا ہے عشق بھی سنگِ گراں تو ہے

میں ناتواں اٹھاؤں گا یہ بار عشق کا

میرا خلش خیال تو ایسا نہیں مگر

کہتے ہیں لوگ شغل ہے بیکار عشق کا

عباس خلش

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(955) ووٹ وصول ہوئے

متعلقہ شاعری

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Abbas Khalish, Lag Jaey Jis Ki Jaan Ko Azaar Ishq Ka in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad, Social Urdu Poetry. Also there are 102 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.5 out of 5 stars. Read the Sad, Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Abbas Khalish.